ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بارشیں آسمانی بجلی گرنے سے 2بچے جاں بحق نشیبی علاقے زیر آب بجلی کا ترسیلی نظام متاثر

ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بارشیں آسمانی بجلی گرنے سے 2بچے جاں بحق نشیبی ...

  



ملتان‘ حاصل پور‘ ڈیرہ غازیخان‘ محسن وال‘ وہا ڑی‘ راجن پور‘ کوٹ ادو‘ میاں چنوں‘ چوک سرور شہید (سپیشل رپورٹر‘نیوز رپورٹر‘ نمائندگان پاکستان) ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر میں موسلادھار بارش سے جل تھل ہوگیا، حاصل پور اور ڈیرہ اور محسن وال میں آسمانی بجلی گرنے(بقیہ نمبر35صفحہ7پر)

سے 2بچے جاں بحق ہوگئے جبکہ عمارتوں کو نقصان پہنچا مختلف شہروں میں نشیبی علاقے زیر آب آگئے، جبکہ بجلی کا ترسیلی نظام شدید متار ہوا تفصیل کے مطابق ملتان سمیت مضافاتی علاقوں میں وفقہ وقفہ سے بارش کا سلسلہ جاری سردی جاتے جاتے دوبارہ واپس لوٹ آئی،دن بھر ہونے والی بارش سے درجہ حرارت میں نمایاں کمی،کرونا وائرس بڑھنے کا خدشہ پیدا ہوگیا آج بھی بارش ہوگی۔اس ضمن میں ملتان سمیت مضافاتی علاقوں میں گزشتہ روز سے رات گئے تک بارش کا سلسلہ جاری رہا جس سے ہر طرف جل تھل ہوکر رہ گیا ہے۔شہر میں لاک ڈاؤن کے باعث شہریوں کے گھروں میں رہنے اور تجاراتی مراکز بند رہنے کے باعث شہر میں بار ش کے باوجود معمولات معمول پر رہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ روز ہونے والی بارش رات دس بجے تک 20ملی میٹر ریکارڈ کی گئی جبکہ آج بھی گرج چمک کے ساتھ بعض مقامات پر بارش کا امکان ہے۔مذکورہ بارش سے درجہ حرارت کی شدت میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے جس کے باعث کروناوائرس کے بڑھنے کے خدشات بڑھ گئے ہیں۔ جمعرات کے روز ملتان میں ہونے والی موسلا دھار بارش کے دوران واسا میں ہائی الرٹ جاری کر کے تمام سیوریج اور ڈسپوزل اسٹیشن ڈویژنوں کے افسران، سٹاف کو ہنگامی بنیادوں پر فیلڈ میں طلب کرلیا گیا اور شہر بھر کے مختلف علاقوں میں نکاسی آب کے لیے آپریشن شروع کردیا گیا دوپہر سے شروع ہونے والا بادش کا سلسلہ شام گئے تک جاری رہا کرونا ایمرجنسی کے باوجود فیلڈ سٹاف بارش کے پانی کی نکاسی کے لئے مسلسل متحرک رہااس دوران ایم ڈی واسا نسیم خالد چانڈیو نے چونگی نمبر9 ڈسپوزل اسٹیشن ایم ڈی اے روڈ،کچہری روڈ،ایل ایم کیو روڈ، بوسن روڈ،گلگشت،دولت گیٹ،دہلی گیٹ،پاک گیٹ،خونی برج، حرم گیٹ،شاہین، کلمہ چوک، پرانا بہاولپور روڈ، چوک رشید آباد، سمیت شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کرکے نکاسی آب کے انتظامات کا جائزہ لیا اور انہوں نے لوڈ شیڈنگ ہونے کی صورت میں پمپوں کو جنریٹرز پر چلانے کا حکم دیا اس دوران ایم ڈی واسا کو شام ساڑھے 6 بجے تک ڈسپوزل اسٹیشنوں پر ریکارڈ کی گئی بارش سے متعلق رپورٹ بھی پیش کی رپورٹ کے مطابق چونگی نمبر 9ڈسپوزل اسٹیشن پر 15 ملی میٹر، سمیجہ آباد ڈسپوزل اسٹیشن پر14 ملی میٹر، کڑی جمنداں 14ملی میٹر، پرانا شجاع آباد روڈ ڈسپوزل اسٹیشن پر 13ملی میٹربارش ریکارڈ کی گئی ہے۔ میپکو ریجن کے زیر انتظام علاقوں میں شدید بارشوں سے بجلی کی فراہمی متاثر ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے 110 فیڈرز سے بجلی کی فراہمی بند ملتان، خانیوال، مظفر گڑھ، ڈی جی خان، وہاڑی، ساہیوال، بہاولنگر، بہاولپور اور رحیم یار خان سرکلوں کے فیڈرز سے بجلی کی فراہمی متاثر ریجن بھر میں بارش کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری چیف ایگزیکٹو آفیسر میپکو انجینئر طاہر محمود نے بارش رکتے ہی بجلی بحال کرنیکا حکم دیدیا جبکہ لائن سٹاف کو سیفٹی پالیسی اور کورونا سے بچاؤ کی حفاظتی تدابیر پر عمل کرنے کی بھی ہدایت کی ہے اور سپریٹنڈنگ انجینئرز اور ایکسین کو بجلی بحالی کے عمل کی مانیٹرنگ کی ہدایت کی گئی ہے۔ آسمانی بجلی گرنے سے دو بچے جاں بحق۔تفصیل کے مطابق حاصل پور کے نواحی علاقہ بستی پلاں موضع گاھی بہرام ہیڈ اسلام نزد لڈن آسمانی بجلی گرنے سے دو بچے 14 سالہ افتخار اور سات سالہ علی شیر موقع پر جاں بحق ہوگئے اطلاع ملنے پر عملہ ریس?یو 1122 حاصل پور موقع پر پہنچ گیا اور ڈیڈ باڈیز کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال حاصل پور منتقل کر دیا۔واقعہ کی اطلاع پر اے سی حاصل پور عبدالجبار گجر اور جمشید اختر DSP حاصل پور بھی موقع پر پہنچ گئے۔ پنجاب کے دیگر اضلاع کی طرح ڈیرہ غازیخان شہر چوٹی، سخی سرو، کوٹ چھٹہ، پائیگاہ سمیت گردو نواح کے علاقوں میں گزشتہ روز دن بھر وقفے وقفے سے ٹھنڈی ھوا کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری رہا گزشتہ روز ھونے والی بارش سے جہاں موسم خوشگوار اور دوبارہ سرد ھوگیا اور شہری گھروں میں بیٹھ کر لطف اندوز ہوتے رہے وہاں میپکو کی طرف سے متعدد فیڈرز سے بجلی کی فراہمی کئی گھنٹے معطل رہی بارش کے دوران غازی گھاٹ ٹول پلازہ کے قریب آسمانی بجلی گرنے کا واقعہ رونما ہوا تاھم بجلی گرنے سے کسی بھی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا البتہ پل کے نزدیک لگے ہوئے سی سی ٹی وی کیمروں اور یو پی ایس وغیرہ کونقصان پہنچا۔ پولیس ملازمان جو اپنی پکٹ پر ڈیوٹی سرانجام دے رہے تھے مکمل طور پر محفوظ رہے۔ گاؤں 15ایٹ بی آر میں بارش کے باعث غریب نابینا کی چھت گرگئی،تفصیلات کے مطابق میاں چنوں کے گاؤں 15ایٹ بی آر میں غریب محنت کش کی بارش کے باعث چھت گر گئی،چھت گرنے سے ملبے تلے سامان دب کر تباہ ہوگیا۔ شہر اور گردونواح کے علاقوں میں گرج چمک کے ساتھ بارش سے موسم سرد ہو گیا بارش کی وجہ سے گندم کی فصل متاثر تفصیل کے مطابق میاں چنوں شہر اور گردونواح کے علاقوں جنڈیالی بنگلہ محسن وال موسی ورک چھب کلاں میں گرج چمک کے ساتھ بارش سے موسم سرد ہو گیا بارش کی وجہ سے گندم کی فصل متاثر ہوئی ہیں۔ راجن پور میں صبح سویرے سے ہی گہرے بادلوں اور سورج کے درمیان آنکھ مچولی جاری رہی دوپہر کے وقت موسلادھار بارش شروع ہوئی جو دن بھر جاری رہی بارش کے باعث شہر کی اکثر گلیاں اورسڑکات تالاب کا منظر پیش کر نے لگیں،ٹھنڈی ہواکے چلنے سے موسم خوشگوار ہوگیابارش کے باعث شہر کے فیڈر راجن پور شہر،ریلوے فیڈر اور عیدگاہ فیڈر ٹرپ کرگئے جس کے باعث تینوں فیڈرز کی بجلی رات آٹھ بجے تک بند رہی دوسری جانب گذشتہ دودن قبل بارش اور ژالہ باری سے گندم کی فصل کو شدید نقصان پہنچا آج پھر زمینداروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ حالیہ بارش سے گندم کی فصل شدید متاثر ہوگی اور لگاتار بارش کے سبب گندم کی تیار فصل کونقصان پہنچنے کاخدشہ ہے۔ کوٹ ادو وگردونواح میں بارش کا سلسلہ جاری،بارش سے نشیبئی علاقے زیرآب، بجلی وٹیلی فون کا نظام بھی معطل ہوگیا، دیہی علاقوں میں کئی کئی گھنٹے بجلی بند رہی،بارش کا سلسلہ رات گئے جاری رہا،اس بارے تفصیل کے مطابق کوٹ ادو وگردونواح میں بارش کا سلسلہ تا حال وقفے وقفے سے جاری ہے،بارش سے نشیبئی علاقے زیرآب آگئے جبکہ بجلی وٹیلی فون کا نظام بھی کئی علاقوں میں معطل ہوگیا جبکہ گلیوں اور سڑکات پر پانی بھر جانے سے بارش کا پانی لوگوں کے گھروں اور دوکانوں میں داخل ہو گیا جسکی وجہ سے لوگوں کو آنے جانے میں شدید دشواری کا سامنا رہا،بارش کا سلسلہ تاحال وقفے وقفے سے جاری ہے۔ چوک سرور شہید اور گردونواح نواح میں سارا دن وقف وقفہ سے موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری رہا.. تیز بارش اور ہوا سے گندم کی فصل کو نقصان پہنچا, جبکہ میونسپل کمیٹی انتظامیہ کی غفلت اور لاپرواہی کا سلسلہ بھی جاری ہے سڑکوں کے ساتھ بنے برساتی بالوں کی صفائی نہ ہونے سے پانی تالاب کی صورت میں سڑکوں پر جمع ہوگیا جس کی وجہ سے کروڑوں روپے کی لاگت سے بنے روڈزتباہ وبرباد ہو چکے ہیں اور قومی خزانے کو دانستہ نقصان پہنچایا جارہا ہے.کئی بار میڈیا نے نشان دہی کی لیکن ڈی سی مظفر گڑھ نے کبھی چوک سرورشہید آنا بھی گوارہ نہ کیا.

میونسپل کمیٹی کا عملہ شتر بے مہار ہوچکا ہے اس کی بڑی وجہ یہ بھی ہے کہ یہاں تعینات چیف آفیسر کا رانا کاشف کا 15روز قبل تبادلہ ہوچکا ہے اور حکومت پنجاب نے یہاں سی او تعینات نہ کیا ہے

مزید : ملتان صفحہ آخر