فیصل آباد قرنطینہ سے 213 مریض فرار ہونے کا معاملہ ،عابد شیر علی کے دعویٰ کا بھانڈا پھوٹ گیا

فیصل آباد قرنطینہ سے 213 مریض فرار ہونے کا معاملہ ،عابد شیر علی کے دعویٰ کا ...
فیصل آباد قرنطینہ سے 213 مریض فرار ہونے کا معاملہ ،عابد شیر علی کے دعویٰ کا بھانڈا پھوٹ گیا

  



 فیصل آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیر مملکت اور مسلم لیگ ن کےرہنماعابدشیرعلی  اپنے شہر کی صورتحال سے بے خبر نکلے،ن لیگی رہنما کے غلط ٹویٹ نے پاکستانیوں میں شدید تشویش کی لہر پیدا کر دی تاہم عابد شیر علی  کےدعوی کومستردکرتےہوئےفیصل آباد انتظامیہ نےقرنطینہ سینٹرسےکسی بھی مریض کےفرار ہونے کی تردید کر دی ہے۔

مقامی ٹی وی چینل’’سٹی فورٹی ون‘‘ کے مطابق عابد شیر علی کی جانب سے فیصل آباد قرنطینہ سے 213 مریضوں کے فرار بارے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پرکیا جانے والا ٹویٹ غلط ہے ،عابد شیر علی بیرون ملک بیٹھ کر اپنے شہر کے حالات سے مکمل بے خبر ہیں کیونکہ انہیں یہ بھی پتا نہیں ہے کہ قرنطینہ سینٹر  جی سی یونیورسٹی جھنگ روڈ پر نہیں بلکہ پارس میں ہے ۔نجی ٹی وی کا کہنا تھا کہ عابد شیر علی نے بیرون ملک بیٹھ کر ایسا ٹویٹ کر کےشہریو ں کو خوفزدہ اور  پاکستان کو بدنام کرنے کی کوشش کی ہے ۔دوسری طرف  فیصل آباد انتظامیہ نے عابد شیر علی کے ٹویٹ کو مسترد کرتے ہوئے  کہا ہے کہ جی سی یونیورسٹی جھنگ روڈ  سے کوئی ایک بھی کورونا وائرس کا مریض فرار نہیں ہوا ۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سابق وزیر مملکت اور مسلم لیگ ن کے رہنما جو اس وقت لندن میں موجود ہیں نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ ’’فیصل آباد سے 213 افراد جو کہ کرونا وائرس میں مبتلا تھے انھیں جی سی یونیورسٹی جھنگ روڈ کیمپس میں رکھا گیا تھا وہ وہاں سے فرار ہو گئے ہیں۔ پورے شہر میں پریشانی کا عالم ہے، اس کے ذمہ دار کون ہے؟‘‘۔

مزید : علاقائی /پنجاب /فیصل آباد /کورونا وائرس