میئر سکھر کا ڈیڑھ کروڑ روپے کی اشیائے خورد ونوش تقسیم کرنے کا اعلان

میئر سکھر کا ڈیڑھ کروڑ روپے کی اشیائے خورد ونوش تقسیم کرنے کا اعلان

  



سکھر (بیورورپورٹ) میئر سکھر بیرسٹر ارسلان اسلام شیخ نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کی غرض سے کئے گئے لاک ڈاؤن کے باعث پیدا ہونیوالی صورتحال کے پیش نظر مستحقین میں (1.5) ڈیڑھ کروڑ روپے کی اشیاء خورد ونوش / راشن تقسیم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ وہ مشکل کی اس گھڑی میں آگے آئیں اور اپنے غریب بہن بھائیوں کی مدد کرنے میں ہمارا ساتھ دیں‘ ہمیں پیسے نہیں صرف راشن چاہئے۔ جمعرات کے روز اپنے جاری کردہ بیان میں میئر سکھر بیرسٹر ارسلان اسلام شیخ نے اس حوالے سے مزید تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اقدام ہم نے اپنی پارٹی اور چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی پالیسی کے تحت اٹھائے ہیں‘ ان ہی کے تعاون سے یہ ممکن ہوا ہے کہ ہم آج ڈیڑھ کروڑ کی خطیر رقم سے اشیاء خور و نوش / راشن کے 52 سو تھیلے اپنے مستحق بہن بھائیوں میں تقسیم کریں گے‘ آٹا، چینی، چاول، گھی و دیگر ضروری اشیاء خورد و نوش پر مشتمل تھیلے میں 10-12 روز کا راشن رکھا گیا ہے‘ یہ پہلا مرحلہ ہے جس میں یتیم‘ بیواؤں اور معذوروں کو ترجیح دی جائے گی جبکہ سندھ حکومت کی جانب سے اعلان کردہ پیکیج بھی جلد موصول ہوگا جس سے کافی مدد ملے گی اور دیگر مستحقین بالخصوص سفید پوش افراد میں بھی راشن تقسیم کریں گے۔ ڈیڑھ کروڑ روپے کی تفصیلات بتاتے ہوئے میئر سکھر نے کہا ہے کہ ایک فیملی نے نام ظاہر نہ کرنے کی صورت میں 50 لاکھ روپے اس کار خیر کیلئے دیئے جبکہ شہر کی تمام یوسیز نے بھی اس نیک عمل میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور ڈھائی ڈھائی لاکھ روپے اپنے فنڈز میں سے جمع کراوائے‘ اسی طرح 25 لاکھ روپے بھی ایک دیگر فنڈ سے موصول ہوئے جبکہ 10 لاکھ روپے میونسپل کارپوریشن نے جمع کرائے ہیں‘ ہماری کوشش ہے کہ راشن کے یہ 52 سو تھیلے جلد از جلد مستحقین میں تقسیم کردیں‘ آج رات یا کل صبح یہ راشن تقسیم کردیا جائے گا۔ میئر سکھر بیرسٹر ارسلان اسلام شیخ نے شہر کے مخیر حضرات سے پُر زور اپیل بھی کی ہے کہ وہ غریب‘ مستحق خاندانوں کی مدد میں ہمارا ساتھ دیں‘ ہمیں پیسے نہیں بلکہ راشن چاہئے تاکہ ان لوگوں کی مدد کی جاسکے جو روزانہ کی اجرت پر محنت مزدوری کرتے ہیں اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے شدید پریشانی میں مبتلا ہیں‘ مخیر حضرات ہمیں راشن دیں اور ساتھ کسی ایک بندے کو بھی مقرر کردیں تاکہ وہ سارے بندوبست کی مانیٹرنگ کرے کہ راشن مستحق تک پہنچ بھی پارہا ہے یا نہیں‘ ہم مشکل میں گھری عوام کے ساتھ کھڑے ہیں آپ بھی آئیں اور ہمارا ہاتھ بٹائیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر