فٹ بال میچ نے اطا لوی شہر بیر گا موکوکورونا وائرس کا مرکز بنادیا

  فٹ بال میچ نے اطا لوی شہر بیر گا موکوکورونا وائرس کا مرکز بنادیا

  



بیرگامو(آئی این پی) اٹلی کے فٹبال کلب اٹلانٹا کی تاریخ کا سب سے بڑا میچ تھا اور بیرگامو شہر کی ایک تہائی آبادی میلان کے مشہور سان سیرو سٹیڈیم میں پہنچ گئی۔اٹلی کے کلب کا میچ سپین کی ٹیم ویلنسیا سے تھا جس کے ڈھائی ہزار کے قریب مداح بھی سفر کرکے چیمپئنز لیگ کے میچ میں شرکت کے لیے پہنچے۔ 19 فروری کو ہونیوالے میچ کے ایک ماہ بعد اب اسے نئے نوول کورونا وائرس کی وبا کا مرکز بیرگامو کو بنانیکی سب سے بڑی وجہ قرار دیا جارہا ہے۔ایک طبی ماہر نے اسے’حیاتیاتی بم‘ قرار دیا ہے جس نے ویلنسیا کی 35 فیصد ٹیم کو کووڈ 19 کا شکار بنادیا۔میلان میں ہونیوالے میچ کو اطالوی میڈیا کی جانب سے گیم زیرو قرار دیا جارہا ہے جو اٹلی میں مقامی طور پر وائرس سے متاثر ہونیوالے پہلے کیس سے 2 دن پہلے کھیلا گیا تھا۔بیرگامو کے میئر گیوجیو جوری نے فارن پریس ایسوسی ایشن سے فیس بک پر لائیو بات کرتے ہوئے کہا وسط فروری میں ہمیں حالات کا درست اندازہ نہیں تھا۔اگر یہ بات درست ثابت ہوجاتی ہے تو اسکا مطلب ہوگا کہ یورپ میں یہ وائرس جنوری میں ہی پھیل چکا تھا اور میچ میں شریک 40 ہزار افراد نے اس وائرس کو ایک دوسرے کے تقسیم کیا۔ اس بات کا بھی امکان ہے کہ اٹلی کے اس شہر کے سیکڑوں شہری رات بھر گھروں اور ہوٹلوں میں اکٹھے ہوکر میچ دیکھتے رہے ہوں گے۔ میئر کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے ہم نہیں جانتے تھے، کوئی نہیں جاتنا تھا کہ وائرس پہلے ہی یہاں پہنچ چکا ہے۔اس میچ کے بعد ایک ہفتے کے اندر ہی بیرگامو میں اولین کیسز سامنے آئے اور اسی وقت ویلنسیا سے آنیوالا ایک صحافی اس خطے کو کووڈ 19 سے متاثرہ دوسرا شخص بنا، اور اس سے رابطے میں رہنے والے بھی اس وائرس کا شکار ہوگئے، جس میں میچ میں شریک ویلنسیا کلب کے مداح بھی شامل تھے۔ اٹلانٹا نے پہلے مصدقہ کیس کی تصدیق منگل کو کی مگر ویلنسیا میں ایک تہائی سے زیادہ سکواڈ وائرس سے متاثر ہوا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی