کورونا وائرس ہر سال سردیوں میں حملہ کر سکتا ہے، امریکی سائنسدان

  کورونا وائرس ہر سال سردیوں میں حملہ کر سکتا ہے، امریکی سائنسدان

  



واشنگٹن (آئی این پی) امریکا کے سینئر سائنسدان ڈاکٹر انتھونی فاکی کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس ہر سال سردیوں میں سیزنل وائرس کی طرح حملہ کرسکتا ہے، وائرس چکنی تہہ میں بند ہوتا ہے،باربار صفائی کریں،ہاتھ دھوئیں۔امریکا کے سینئر سائنسدان ڈاکٹر انتھونی فاکی نے کوروناسے متعلق بیان میں کہا ہے کہ کورونا وائرس ہر سال سیزنل وائرس کی طرح حملہ کرسکتا ہے، وائرس کے دوبارہ حملہ کرنے سے پہلے ویکسین تیار کرنا ہوگی۔ڈاکٹرانتھونی فاکی کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس نے جنوب سے جڑ پکڑنا شروع کی تھی جہاں اس وقت سردیوں کا موسم ہے اور زیادہ کیسزان ممالک میں سامنے آرہے ہیں جہاں ٹھنڈ ہے۔امریکی سائنسدان نے کہا کہ رات دن ویکسین بنانے کیلئے کام کررہے ہیں، اس وقت دو ویکسین تیار ہیں جو ہم انسانوں پر آزما رہے ہیں، ایک امریکا کے پاس ہے اور دوسری چین کے پاس موجود ہے جبکہ اس کے مکمل طور پر استعمال پر ایک سے ڈیرھ سال لگ سکتا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ وائرس ایک چکنی تہہ میں بند ہوتا ہے لہٰذا بار بار صفائی کریں اور ہاتھ دھوئیں۔خیال رہے کورونا وائرس سے دنیا بھرمیں ہلاک افراد کی تعداد 21 ہزار 344 ہوگئی ہے جبکہ 4 لاکھ تہترہزار543 متاثرہیں، چین میں کورونا وائرس سے مزیدچھ افراد ہلاک ہوگئے اور اڑسٹھ نئے کیسز رپورٹ ہوئے، جس کے بعد چین میں ہلاکتوں کی تعداد 3ہزار دوسوستاسی ہوگئی ہے۔امریکا میں مزید پانچ افراد ہلاک ہوئے اوردوسواٹہترنئے کیس رپورٹ ہونے کے بعد کورونا وائرس سیہلاک افراد کی تعداد 1032 اور متاثر افراد کی تعداد اڑسٹھ ہزارسے زائد ہوگئی۔اٹلی میں سات ہزارترپن اوراسپین میں اب تک تین ہزارچھ سوسینتالیس افراد جان گنوا چکے ہیں جبکہ آسٹریا میں گیارہ نئی ہلاکتوں کے بعد کورونا سے ہلاک افراد کی تعدادبیالیس ہوگئی۔عالمی ادارہ صحت نیتنبیہ کی ہے کہ حالات کنٹرول نہ کییگئے تو امریکا دنیا میں کورونا وائرس کا نیا مرکز بن سکتاہے۔

مزید : عالمی منظر