لیبیا میں گھمسان کی جنگ، باغی فوج نے ترکی کا ڈرون طیارہ مار گرایا

      لیبیا میں گھمسان کی جنگ، باغی فوج نے ترکی کا ڈرون طیارہ مار گرایا

  



طرابلس (این این آئی)لیبیا میں جنرل خلیفہ حفتر کی فوج نے اعلان کیا ہے کہ اس نے ملک کے جنوب میں ترکی کا ایک ڈرون طیارہ مار گرایا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جاری بیان میں لیبیا کی فوج نے بتایا کہ زلیتن کے کھیت کے نزدیک گرایا جانے والا ڈرون طیارہ راکٹوں سے لیس تھا۔ اس کے ذریعے الجفرہ کے علاقے میں تعینات لیبیا کی فوج کے یونٹوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی جا رہی تھی۔لیبیا کی فوج نے مذکورہ ڈرون طیارے کے ملبے کی تصاویر بھی جاری کی ہیں۔دوسری جانب دارالحکومت طرابلس کی جنوبی سمت پورے دن لیبیا کی فوج اور وفاق حکومت کے زیر انتظام ملیشیاؤں کے درمیان مسلح جھڑپوں کا سلسلہ جاری رہا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل فریقین نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے فائر بندی کا اعلان کیا تھا۔صلاح الدین اور عین زارہ کے محاذوں پر متحارب فریقین کے بیچ گھمسان کی لڑائی دیکھی گئی۔ اس دوران بھاری توپوں کا استعمال کرتے ہوئے شدید گولہ باری ہوئی۔ لیبیا کی فوج کی جانب سے جاری بیانات میں باور کرایا گیا کہ عین زارہ کے محاذ پر وفاق حکومت کی فورسز کے پیچھے ہٹ جانے کے بعد بڑے پیمانے پر پیش قدمی عمل میں آئی۔

مزید : عالمی منظر