کل تک سویڈن کے لوگ لاک ڈاﺅن کرنے والے ممالک کا مذاق اُڑا رہے تھے، لیکن اب وہاں کیا حالات ہیں؟ یوٹرن لینا پڑگیا

کل تک سویڈن کے لوگ لاک ڈاﺅن کرنے والے ممالک کا مذاق اُڑا رہے تھے، لیکن اب ...
کل تک سویڈن کے لوگ لاک ڈاﺅن کرنے والے ممالک کا مذاق اُڑا رہے تھے، لیکن اب وہاں کیا حالات ہیں؟ یوٹرن لینا پڑگیا

  

سٹاک ہوم(مانیٹرنگ ڈیسک) سویڈن کے لوگ کل تک لاک ڈاﺅن کرنے والے ممالک کا مذاق اڑا رہے تھے لیکن اب سویڈش حکومت نے یوٹرن لیتے ہوئے ملک میں لاک ڈاﺅن کا فیصلہ کر لیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سویڈن میں اب تک کورونا وائرس کے 2ہزار 806مریض سامنے آ چکے ہیں اور66افراد کی موت واقع ہو چکی ہے۔ گزشتہ ایک دن میں کورونا وائرس کے باعث ہونے والی اموات میں 60فیصد اضافہ ہوا، جس کے بعد حکومت نے مسئلے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے لاک ڈاﺅن کا فیصلہ کر لیا اور اس حوالے سے فریقین میں مذاکرات جاری ہیں۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ ایک دن میں سویڈن میں کورونا وائرس کے 534نئے مریض سامنے آئے اور 25اموات ہوئیں۔ اس سے قبل 41اموات ہو چکی تھیں چنانچہ اس نئے اضافے سے ایک ہی دن میں اموات کی تعداد 66تک پہنچ گئی۔سویڈن کا دارالحکومت سٹاک ہوم کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہو رہا ہے اور زیادہ تر اموات بھی اسی شہر میں ہو رہی ہیں، چنانچہ حکومت لاک ڈاﺅن کرکے دارالحکومت کا باقی ملک سے رابطہ ختم کرنے پر غور کر رہی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -