کرس جورڈن کو تاخیر سے پی ایس ایل چھوڑ کر جانے پر کوئی پچھتاوا نہیں مگر آخر ان کے فیصلے کی وجہ کیا بنی؟ بالآخر بتا دیا

کرس جورڈن کو تاخیر سے پی ایس ایل چھوڑ کر جانے پر کوئی پچھتاوا نہیں مگر آخر ان ...
کرس جورڈن کو تاخیر سے پی ایس ایل چھوڑ کر جانے پر کوئی پچھتاوا نہیں مگر آخر ان کے فیصلے کی وجہ کیا بنی؟ بالآخر بتا دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی اور پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) میں کراچی کنگز کی نمائندگی کرنے والے کرس جورڈن تاخیر سے پاکستان چھوڑنے کے فیصلے پر مطمئن ہیں جن کا کہنا ہے کہ واحد خدشہ فلائٹ آپریشن معطل ہونے کا تھا۔

تفصیلات کے مطابق کرس جورڈن نے کہا کہ پی ایس ایل کیلئے دیر تک رکنے پر کوئی پچھتاوا نہیں ہے۔ اس وقت کورونا وائرس کا تیزی سے پھیلاﺅ شروع نہیں ہوا تھا اور واحد خدشہ یہی تھا کہ انگلینڈ میں بھی صورتحال زیادہ خراب ہونے کے بعد فلائٹ آپریشن معطل ہوگیا توگھر واپس نہیں جا سکیں گے لیکن جب ایلکس ہیلز نے اپنی کیفیت سے ساتھی کھلاڑیوں کو آگاہ کیا تو تیزی سے ایونٹ کے التواءکا فیصلہ ہوگیا۔

کرس جورڈن نے کہا کہ ہمیں اس بات کا یقین تھا کہ ہمیں کسی بھی صورتحال سے متعلق پہلے ہی آگاہ کر دیا جائے گا لیکن جب ایلکس ہیلز نے اپنی کیفیت سے ساتھی کھلاڑیوں کو آگاہ کیا تو تیزی سے پی ایس ایل کے التوا کا فیصلہ ہوگیا، ہم لوگوں نے ٹیسٹ بھی کرائے لیکن زیادہ تشویش نہیں تھی، میں نے کافی مطالعہ کیا ہے اور جانتا ہوں کہ کوئی بھی کورونا وائرس کی گرفت میں آ سکتا ہے،کوئی ایسا شخص بھی آپ کو اس کا شکار کرنے کا سبب بن سکتا ہے جس میں ابھی تک علامات بھی ظاہر نہیں ہوئی ہوں، میں نے صرف اس بات کا خیال رکھا کہ جتنا ہوسکے دوسروں سے فاصلہ برقرار رکھنا ہے۔

مزید :

کھیل -PSL -PSL News Update -کورونا وائرس -