’یہ کہتے ہیں ہمیں چرس لا کر دو، ہمارے ساتھ ہاتھا پائی کرتے ہیں‘ قرنطینہ میں موجود سٹاف زائرین سے تنگ آگیا، افسروں کے آنے پر شکایات کے انبار لگادیے

’یہ کہتے ہیں ہمیں چرس لا کر دو، ہمارے ساتھ ہاتھا پائی کرتے ہیں‘ قرنطینہ میں ...
’یہ کہتے ہیں ہمیں چرس لا کر دو، ہمارے ساتھ ہاتھا پائی کرتے ہیں‘ قرنطینہ میں موجود سٹاف زائرین سے تنگ آگیا، افسروں کے آنے پر شکایات کے انبار لگادیے

  

فیصل آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) صنعتی شہر فیصل آباد میں قائم کیے گئے قرنطینہ سنٹر میں موجود زائرین نے عملے کو تنگ کرکے رکھ دیا، چرس اور دیگر غیر قانونی چیزوں کی فرمائشیں کرنے لگے۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ایک ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ قرنطینہ سنٹر میں ڈیوٹی کرنے والا سٹاف کس طرح افسران کے سامنے شکایات کے انبار لگارہا ہے۔ ایک سٹاف ممبر نے ضلعی انتظامیہ اور فوجی حکام کو بتایا کہ زائرین ان کے ساتھ شرارتیں کرتے ہیں اور ہاتھا پائی بھی کرتے ہیں۔

سٹاف ممبر نے بتایا کہ بعض زائرین جن میں ڈرائیورز کی اکثریت ہے وہ کہتے ہیں کہ ہمیں چرس اور سگریٹ لا کر دو۔ سٹاف ممبر کی اس بات پر ایک افسر نے کہا کہ سگریٹ کی تو چلو خیر ہے ، وہ تو دے سکتے ہیں لیکن چرس کہاں سے دیں۔

قرنطینہ سنٹر کے سٹاف ممبر نے مزید بتایا کہ اندر موجود زائرین کو جب سگریٹ نہیں ملے توایک چاچا نے سب لڑکوں کو جمع کیا اور ہمارے کمروں میں گھس کر سارے لاکر توڑ دیے۔ سٹاف ممبرز کی شکایات پر موقع پر موجود افسران نے انہیں یقین دہانی کرائی کہ جلد ہی ان کے مسائل حل کردیے جائیں گے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -فیصل آباد -کورونا وائرس -