ایران میں کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 300افراد موت کے منہ میں چلے گئے

ایران میں کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 300افراد موت کے منہ میں چلے گئے
ایران میں کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 300افراد موت کے منہ میں چلے گئے

  

تہران (ڈیلی پاکستان آن لائن )کورونا وائرس نے دنیابھر میں خوف پھیلا رکھا ہے اور اس سے نمٹنے کے لیے سوشل میڈ یا پر جعلی ٹوٹکے بھی چل رہے ہیں جس پر عمل کرنا لوگوں کو مہنگا پڑ رہا ہے،ایسا ہی واقعہ ایران میں پیش آیا جہاں سینکڑوں افراد نے کورونا وائرس سے بچنے کے لیے زہریلا کیمیکل پی لیا جس سے 300افراد ہلاک ہو گئے جبکہ ایک ہزار سے زائد تشویشناک حالت میں مبتلا ہیں، کیمیکل پینے والے متعدد افراد اگرچہ مرنے سے بچ گئے ہیں، تاہم انہیں اور کئی طرح کے مسائل ہوگئے ہیں جن میں سے بینائی بھی ایک ہے ۔غیر ملکی خبر رساں ادارے نیو یارک ٹائمز کے مطابق کورونا وائرس سے بچنے کے لیے زہریلا کیمیکل پینے سے قبل بھی وہاں رواں ماہ وائرس سے بچانے کی افواہ پر زہریلی شراب پینے سے کم سے کم 27 افراد ہلاک ہوئے تھے۔زہریلا کیمیکل پینے سے ملک میں مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 480 تک جا پہنچی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -