27 مارچ ۔۔۔تاریخ کے آئینے میں 

27 مارچ ۔۔۔تاریخ کے آئینے میں 
27 مارچ ۔۔۔تاریخ کے آئینے میں 

  

آج کے دن 1909پہلی دفعہ قتل کے کیس میں فنگر پرنٹ کو بطور ثبوت استعمال کیا گیا ۔دنیا کاپہلا آفیشل فنگر پرنٹ بیورو سکاٹ لینڈ میں 1901میں بنایا گیا ۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ دنیا کا پہلا فنگر پرنٹ بیورو 1897میں بھارتی شہر کلکتہ میں بنایا گیا تھا۔

27مارچ 1920کو روس میں قحط کا آغاز ہو ا جس کی وجہ سے ملک میں خوراک کی شدید قلت کا سامنے کرنا پڑا۔یہاں تک کہ ملک میں گندم کا شدید بحران پیدا ہوا جس کی بڑی وجہ جنگ عظیم اول تھی جس کی وجہ ملک میں زراعت کا شعبہ شدید متاثر ہوا۔واضح رہے کہ دنیا میںسب سے زیادہ گندم روس اور یوکرین میں کاشت کی جاتی ہے اور حالیہ روس یوکرین تنازعہ کے بعد ماہرین 1920کے قحط کی توجہ دلا رہے ہیں ۔

آج ہی کے دن 1964کو امریکا میں 8.6ریکٹر سکیل کا زلزلہ محصوص کیا گیا ۔ زلزلہ کو ”گڈ فرائیڈے “ کے نام سے جانا جاتا ہے ۔ زلزلے سے الاسکا میں عمارتیں بڑی طرح لرزاٹھیں اور سمندر میں بڑی لہروں نے جنم لیا ۔زلزلہ سے بڑی طرح تباہی ہوئی عمارتوں کو نقصان پہنچا اور متعدد عمارتیں تباہ ہو گئیں جن سے 131افراد جاں بحق ہو گئے ۔

27مارچ 1989کو سوویت پارلیمانی انتخابات میں اسی فیصد عوام نے ووٹ ڈالے ، اس انتخابات میں اکثریت غیر کمیونسٹ ارکان منتخب ہوئے ۔ ان انتخابات کی سب سے بڑی خاصیت یہ ہوئی کہ تاریخ میں پہلی بار کسی ملک کی عوام نے اتنی بڑی تعداد میں ووٹ کاسٹ کیے تھے ۔ان انتخابات میں ووٹ کا حق رکھنے والے افراد میں سے 80سے 85فیصد افراد نے ووٹ کاسٹ کیا جو کسی بھی ملک کے مقابلے میں بہت زیادہ ہے ۔ یاد رہے کہ 1987میں برطانوی انتخابات کے دوران 75فیصد ووٹ کاسٹ ہوئے۔

مزید :

ادب وثقافت -