عمران کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا،حکومت گرتی دیوار،ایک دھکے کی ضرورت:فضل الرحمٰن

  عمران کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا،حکومت گرتی دیوار،ایک دھکے کی ضرورت:فضل ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        اسلام آباد(نیوزایجنسیاں) جمعیت علمائے اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت کے دن تھوڑے رہ گے ہیں، قوم جلد یوم نجات منائے گی، ایک گرتی ہوئی دیوار ہے ایک دھکا دینے کی ضرورت ہے اور 28مارچ کو متحدہ اپوزیشن کا جلسہ ہوگا۔موٹر وے پر ہکلہ کے مقام پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فضل الرحمن نے کہا کہ حکومت ایک ٹمٹماتا چراغ ہے اور مانند چراغ سحری ہے ایک پھونک مارنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت تباہی کے دہانے پر ہے، مہنگائی عام آدمی کی زندگی تباہ کرچکی ہے جبکہ ملک معاشی اور اخلاقی لحاظ سے ڈوب رہا ہے اور معیشت تباہ ہوچکی ہے۔قبل ازیں ایک انٹرویو میں فضل الرحمن نے کہا ہے کہ اسلام آباد میں دو تین رہیں گے، حکومت دھمکی دے گی تو ہم نے بھی چوڑیاں نہیں پہنچ رکھیں، ہم حدود میں ہیں آپ بھی حدود میں رہیں،تمام اتحادیوں سے معاملات طے ہوچکے ہیں،ایم کیو ایم نے نے وزرات کی کوئی پیشکش نہیں کی،پی پی سے بلدیاتی بل میں معاملات چاہتی ہے جسے مان لیاگیا ہے،عمران خان کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا ہے، وہ آخری سہارے کیلئے ہاتھ پاؤں مار رہے ہیں،کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ انٹرویومیں فضل الرحمن نے بتایا کہ ہمارے لوگ ہفتہ کو اسلام آباد پہنچیں گے اور دو تین دن رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت دھمکی دے گی تو ہم نے بھی چوڑیاں نہیں پہن رکھی ہم بھی حدود میں ہیں،آپ بھی حدود میں رہیں۔مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ پی ڈی ایم کا فیصلہ ہے کہ حلیفوں سے بات کی جائے،(ق لیگ کی گفتگو (ن)لیگ سے ہورہی ہے وہ آپس میں معاملات طے کررہے ہیں،تمام اتحادیوں سے معاملات طے ہوچکے ہیں،ایم کیو ایم نے نے وزرات کی کوئی پیشکش نہیں کی البتہ پی پی سے بلدیاتی بل میں معاملات چاہتی ہے جسے مان لیاگیا ہے۔انہوں نے کہاکہ عمران خان کے ہاتھ سے سب کچھ نکل چکا ہے، وہ آخری سہارے کیلئے ہاتھ پاؤں مار رہے ہیں،کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔انہوں نے کہاکہ جو چیزیں طے کرنی ہے وہ عدم اعتماد کے بعد ہوں گی، دھاندلی ہوئی مینڈیٹ چرایا گیا تھا اسلئے چاہتے ہیں دوبارہ انتخابات ہو۔ 
فضل الرحمن 

مزید :

صفحہ اول -