تھرکول منصوبے سے 3 سال میں 330 میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی، اینگرو کمپنی

تھرکول منصوبے سے 3 سال میں 330 میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی، اینگرو کمپنی

کراچی(اکنامک رپورٹر)اینگرو کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر شمس الدین شیخ نے کہا ہے کہ تھر کے کوئلے کے ذخائر کے بلاک ٹو کے بجلی کی پیداوار کے منصوبے سے کوئلہ سے330میگا واٹ بجلی کی پیداوار حاصل ہوگی۔180ارب روپے کا یہ منصوبہ3 برس میں مکمل ہوگا۔تھرکول کے منصوبے پر بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تھر کا کوئلہ پاکستان کے لئے قدرت کا تحفہ ہے جو توانائی بحران پر قابو پانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ انہوں نے اس پروپیگنڈے کو مسترد کر دیا کہ کوئلہ سے توانائی کے حصول کے نقصانات بہت زیادہ ہیں اور کہا ہے کہ دنیا کے مختلف حصوں میں43 فیصد بجلی کوئلے سے پیدا کی جاتی ہے۔ منصوبے کی تکمیل کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ سرکاری اور نجی شعبہ کے باہمی اشتراک سے تعمیر کیا جا رہا ہے جو آغاز میں یومیہ330 میگا واٹ توانائی پیدا کرنے کی صلاحیت کا حامل ہو گا اور 2017 کے بعد اس منصوبے کی پیداواری صلاحیت یومیہ500میگا واٹ تک پہنچ جائے گی اور پچاس سال تک اس منصوبے سے پیداوار حاصل کی جا سکے گی۔شمس الدین نے کہا کہ تھر کے علاقہ کی ترقی کے لئے بھی خصوصی منصوبے تیار کئے گئے ہیں جن میں صحت، تعلیم، ضلع تھر کے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع اور تھر میں اسلام کوٹ کے مقام پر ائیرپورٹ کی تعمیر جس پر جلد کام شروع کر دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ تھر کے صحراں میں بین الاقوامی معیار کی سڑکوں کی تعمیر کا کام زور و شور سے جاری ہے۔ انہوں نے آگاہ کیا کہ کیمیائی اثرات کی روک تھام کے لئے بھی پلانٹس نصب کئے جا رہے ہیں اور بلاک ٹو پراجیکٹ سائٹ سے دو دیہاتوں کو بھی متبادل جگہ فراہم کر کے منتقل کئے جارہے ہیں-

مزید : کامرس