مرغیاں بہرے پن کے علاج میں بھی مددگار

مرغیاں بہرے پن کے علاج میں بھی مددگار
مرغیاں بہرے پن کے علاج میں بھی مددگار

  

اب تک تو مرغی کو صرف لذیذ گوشت اور توانائی سے بھرپور انڈوں کا ذریعہ ہی سمجھا جاتا تھا مگر ایک نئی تحقیق نے یہ ثابت کیا ہے کہ مرغی بہرے پن کے علاج میں بھی انسان کی مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔ امریکہ میں یونیورسٹی آف ورجینیا کے سکول آف میڈیسن اور نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ڈیف نیس کی ایک تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ مرغیوں میں یہ صلاحیت پائی جاتی ہے کہ وہ بہرے پن کا شکار ہونے کے بعد دوبارہ وہ خلیات پیدا کر لیتی ہیں جو سماعت کو بحال کر دیتے ہیں۔ ماہرین نے بتایا کہ آواز کی باریکی اور مختلف قسم کی آوازوں میں فرق کرنے کا کام اندرونی کان میں موجود مخصوص خلیات کرتے ہیں اور ان کو نقصان پہنچنے کی صورت میں بہرے پن کا مسئلہ پیدا ہو جاتا ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ مرغیوں میں سماعت کی بحالی کے عمل کو سمجھ کو اسے انسانوں میں سماعت کو بحال کرنے کیلئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ تحقیق میں شامل سائنسدان جیفری کورون نے بتایا کہ شدید تیز آواز سے انسان اور مرغی دونوں کے سننے کی صلاحیت واپس نہیں آتی جبکہ مرغیوں میں 10 دن کے اندر یہ صلاحیت بحال ہو جاتی ہے۔ ماہرین پرامید ہیں کہ مرغیاں ہمیں بہرے پن کا علاج فراہم کر دیں گی-

مزید : تعلیم و صحت