ای او بی آئی سکینڈل کے ملزم عامر شفیع کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کےخلاف درخواست پر جواب طلب

ای او بی آئی سکینڈل کے ملزم عامر شفیع کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کےخلاف ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ای او بی آئی سکینڈل کے ملزم عامر شفیع اکرام کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے خلاف دائر درخواست پر فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی سے 29مئی تک جواب طلب کر لیا۔جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے عامر شفیع اکرام کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل ایڈووکیٹ شاہد کریم کی طرف سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا کہ ایف آئی نے سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں ایمپلائز اولڈ ایج بینفٹ انسٹی ٹیوشن کو زمینوں کی فروخت کے سکینڈل میں 18افراد کیخلاف تحقیقات شروع کیں، ایف آئی درخواست گزار کے خلاف بھی ای او بی آئی کو تین جائیدادیں فروخت کرنے کی انکوائری کر رہا ہے جس میں وہ ہر انکوائری میں شامل ہو رہے ہیں لیکن اس کے باوجود ایف آئی اے نے بغیر نوٹس دیئے ستمبر دو ہزار تیرہ سے انکا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈال رکھا ہے جس کی وجہ سے وہ اپنے کاروباری معاملات کے سلسلے میں بیرون ملک سفر نہیں کر سکتے، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ آئین کے تحت کسی کی بھی آزادی سلب نہیں کی جا سکتی لہذا عدالت ایف آئی اے کو درخواست گزار کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے، عدالت نے ابتدائی دلائل سننے کے بعد ایف آئی اے کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 29مئی تک جواب طلب کر لیاہے۔

 جواب طلب

مزید : صفحہ آخر