پیٹ میں ’گڑ گڑ ‘کیوں ہوتی ہے،ماہرین نے جواب دے دیا

پیٹ میں ’گڑ گڑ ‘کیوں ہوتی ہے،ماہرین نے جواب دے دیا
پیٹ میں ’گڑ گڑ ‘کیوں ہوتی ہے،ماہرین نے جواب دے دیا

  

برمنگھم (نیوز ڈیسک) جب ہم بھوکے ہوں یا کھانا کھائے لمبا وقت گزر چکا ہو تو پیٹ میں گڑ گڑ کی آواز سنائی دیتی ہے اور اکثر لوگ اسے پیٹ کی طرف سے کھانے کی فریاد سمجھتے ہیں جبکہ حقیقت کچھ اور ہے۔

دراصل یہ آواز بھوک کی وجہ سے نہیں بلکہ معدے کی صفائی کے عمل کے دوران پیدا ہوتی ہے۔ چھوٹی آنت میں کھانے کے ہضم ہونے کے ایک گھنٹے بعد معدے سے چھوٹی آنت کی طرف ایک طاقتور لہر سفر کرتی ہے جس کا مقصد بچے کھچے کھانے کو معدے سے چھوٹی آنت میں منتقل کرنا ہوتا ہے تاکہ معدہ مکمل طور پر خالی ہوجائے اور اگلے کھانے کے لئے تیار ہوجائے۔

مزیدپڑھیں:ایک کام جو حاملہ خواتین کو ہرگز نہیں کرنا چاہیے،تحقیق کارو ں نے بڑے خطر ے سے خبر دار کر دیا

 یہ معدے کی صفائی کا قدرتی طریقہ ہے لیکن وقفے وقفے سے کچھ کھاتے رہنے والوں کے جسم میں یہ عمل نہیں ہوپاتا۔ یہی وجہ ہے کہ ماہرین خوراک یہ مشورہ دیتے ہیں کہ ایک کھانے کے بعد تقریباً 5 گھنٹے کے لئے کچھ نہیں کھانا چاہیے تاکہ اس دوران تمام خوراک معدے سے چھوٹی آنت میں منتقل ہوجائے۔ تو اگلی بار جب آپ کے پیٹ میں گڑ گڑ ہو تو یاد رکھیں کہ معدے کی صفائی کا عمل جاری ہے اور اسے بھوک کا اشارہ سمجھ کر کچھ کھانے کی غلطی نہ کریں۔

مزید : تعلیم و صحت