کسی بھی ادارے کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ملنی چاہیے،حاجی حنیف طیب

کسی بھی ادارے کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ملنی چاہیے،حاجی حنیف طیب

 لاہور(نمائندہ خصوصی) نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیر حاجی محمد حنیف طیب نے ڈسکہ میں پولیس فائرنگ سے دو وکلاء کے جاں بحق ہونے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ قانون نافذ کرنے والے ادارے ملک کی آئین اور قانون کے سامنے اپنے ہر طرز عمل کیلئے جوابدہ ہیں انکو یہ نہیں سمجھنا چاہئے کہ اُن سے پوچھنے والاکوئی نہیں اور ملک کا ہر ادارہ ،عدلیہ ،وکلاء ،ڈاکٹرز،انجینئرزسب اﷲکے سامنے بھی جوابدہ ہے اورقوم کے سامنے بھی جوابدہ ہے ۔ان خیالات کا اظہار اے ٹی آئی کے رہنماؤں محمد اکرم رضوی ،عامر اسماعیل کی قیادمت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہاکہ کسی بھی ادارے کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جاسکتی    ،وکلا ء بھی معاشرے کا اہم ستون ہے جوعوام کو قانونی معاونت فراہم کرتے ہیں اُن کے ساتھ بہیمانہ اورظالمانہ طرزعمل انتہائی افسوسناک ہے۔انہوں نے حکومت پنجاب سے اپیل کی کہ اس افسوسناک واقعہ کے نتیجے میں پنجاب کے مختلف شہروں میں وکلاء سراپااحتجاج ہیں ، حکومت پنجاب اس واقعے کی تحقیقات میں پوری دیانتداری سے اپنی ذمہ داری اداکرے اور ان پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت قانونی کاروائی کریں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1