وکلاء سمیت کسی بیگناہ کاقاتل انجام سے نہیں بچے گا،ناصر اقبال

وکلاء سمیت کسی بیگناہ کاقاتل انجام سے نہیں بچے گا،ناصر اقبال

لاہو(لیڈی رپورٹر) ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدر محمد ناصراقبال خان ،سیکرٹری جنرل محمد رضا ایڈووکیٹ ، سینئر نائب صدورفاروق چوہان، تنویرخان ،آصف چٹھہ ،میاں زاہدلطیف،صدرمدینہ منورہ سرفرازخان نیازی ، صدر پنجاب یونس ملک،نائب صدور شیخ طلال امجد ، رانا ظفر اللہ خاں، صدرشیخوپورہ عمران حیدر ،صدر ٹیکسلا سردار منیراختر ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی اوراویس علی نے کہا ہے کہ ڈسکہ میں 2وکلاء کاقتل ایس ایچ او کاانفرادی فعل ہے ،قاتل کوقرارواقعی سزادی جائے پرامن احتجاج وکلاء کاحق ہے مگر بحیثیت ادارہ پولیس کیخلاف اعلان جنگ سے تلخیاں پیداہوں گی اس قسم کے اندوہناک سانحات کاسدباب اورریاستی اداروں کوگندی مچھلیوں سے پاک کرناازبس ضروری ہے کسی وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ ہمارامعاشرہ جلاؤگھیراؤ،توڑپھوڑ،تعصب اورتشدد کامتحمل نہیں ہوسکتا۔ڈسکہ میں ناحق قتل ہونیوالے دونوں وکلاء کے قاتل کوسزاضرورملے گی تاہم احتجاج کی آڑمیں دوسرے پولیس اہلکاروں کوتشددکانشانہ بنانا،شہریوں کوپریشان کرنااورشہری وقومی املاک جلانادرست نہیں ہے۔کالے کوٹ والے دوران احتجاج صبروتحمل کادامن ہاتھ سے نہ چھوڑیں۔انہوں نے کہا کہ کسی فردواحد کے گناہ اورجرم کواس کے ادارے سے منسوب نہیں کیا جاسکتا ۔ عدلیہ آزاد ہے،انتقام کاراستہ اختیار کرنے کی بجائے انصاف کادروازہ کھٹکھٹا یا جا ئے ۔انہوں نے کہا کہ اپنے ساتھیوں کے بہیمانہ قتل پرکالے کوٹ والوں کاغم وغصہ فطری ہے مگر پرتشدد احتجاج کرناان کے شایان شان نہیں۔اگرکالے کوٹ والے قانون،عدلیہ اورانصاف پر اعتمادنہیں کریں گے توپھرکون کرے گا۔انہوں نے کہا کہ وکلاء کے قاتل ایس ایچ او نے ماضی میں بھی کسی بیگناہ کو قتل کیا اوربعدمیں ورثاپردباؤڈال کرچھوٹ گیا تھا لہٰذاء اس باروہ کسی نرمی کامستحق نہیں ہے۔       جواہلکاراپنے ادارے کی بدنامی کاسبب بنے اسے نکال باہر کیا جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1