اسرائیلی عدالت کی فلسطینی سپیکر پارلیمنٹ کو ایک سال قید ،6ہزار شیکل جرمانے کی سزا

اسرائیلی عدالت کی فلسطینی سپیکر پارلیمنٹ کو ایک سال قید ،6ہزار شیکل جرمانے ...

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) اسرائیلی فوجداری عدالت نے نے زیرحراست فلسطینی سپیکر پارلیمنٹ ڈاکٹر عزیز دویک کو ایک سال قید اور 6ہزار شیکل جرمانہ کی سزا کا حکم سنا دیا۔اطلاعات کے مطابق بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے فلسطینی رکن اسمبلی احمد عطون نے بتایا کہ گزشتہ روز عوفر نامی فوجی عدالت میں ڈاکٹر عزیز دویک کیخلاف دائر مقدمہ کی سماعت کی گئی۔ اس موقع پرعدالت نے انہیں ایک سال قید اور 6ہزار شیکل جرمانہ کی سزا سنائی۔ڈاکٹر عزیز دویک 16 جون 2014 ء سے اسرائیلی جیل میں زیرحراست ہیں۔ پچھلے سال جون میں مغربی کنارے میں 3یہودی لڑکوں کے پر اسرار طور لاپتا ہونے کے واقعے کے بعد قابض اسرائیلی فوج نے وحشیانہ کریک ڈاؤن میں سینکڑوں فلسطینیوں کوحراست میں لے لیا تھا۔ جن میں فلسطینی پارلیمنٹ کے سپیکر ڈاکٹر عزیز دویک اور کئی دوسرے ارکان اسمبلی بھی شامل تھے۔فلسطین میں انسانی حقوق کی تنظیموں و سیاسی جماعتوں نے اسرائیلی عدالت کے فیصلے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے انصاف کا قتل قراردیا ہے۔ قیدیوں کی بہبود کے سرگرم تنظیم مرکزاحرار کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل کی عدالتیں دنیا کی سب سے بڑی جرائم پیشہ گروپوں کی نمائندہ ہیں جن سے انصاف کی توقع نہیں کی جاسکتی ہے۔

بیان میں اسرائیل سے ڈاکٹر دویک سمیت حراست میں لئے گئے تمام ارکان اسمبلی کو غیر مشروط طورپر رہا کرنے کا مطالبہ کیاگیا ہے۔

مزید : عالمی منظر