تحریک انصاف کے کارکنوں اور قیادت کا ڈسکہ واقعہ کیخلاف احتجاج

تحریک انصاف کے کارکنوں اور قیادت کا ڈسکہ واقعہ کیخلاف احتجاج

لاہور (نمائندہ خصوصی )تحریک انصاف کے کارکنوں نے چیئرمین عمران خان کی کال پرڈسکہ میں پولیس فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے ڈسٹرکٹ بار کے صدر اور پی ٹی آئی کے رہنما رانا خالد عباس ایڈووکیٹ اور عرفان چوہان ایڈووکیٹ کے اندوہناک قتل کے خلاف لاہور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہر ہ کیا اور حکومتی نااہلی کی مذمت کرتے ہوئے زبردست نعرے بازی کی پی ٹی آئی پنجاب کے آرگنائزر چو دھر ی محمد سرور کے ہمراہ سابق صدر لاہور عبدالعلیم خان کارکنوں کی قیادت کرتے ہوئے پریس کلب کے باہر پہنچے اپنے خطاب میں انہوں نے موجودہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جو حکومت انصاف نہ دے سکے اسے مستعفی ہوجانا چاہیے ، گزشتہ دو برسوں میں " ناکام لیگ"کی حکومت کاغذی کاروائیوں سے آگے نہیں بڑھ سکی اور ہر سانحہ کے بعد انکوائری کمیٹی بنانے اور معاملے کو سرد خانے میں ڈالنے کے علاوہ کچھ نہیں کیا جاتاانہوں نے کہا کہ پولیس کو عوام کی خدمت اور حفاظت کی بجائے انہیں ذبح کرنے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے جس پر پی ٹی آئی خاموش نہیں رہے گی ۔پی ٹی آئی لائر ز فورم کے انیس ہاشمی ایڈووکیٹ کی سربراہی میں وکلاء نے بھی اس مظاہرے میں شرکت کی اور اپنے ساتھیوں کے دن دھاڑے قتل پر سخت غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے فوری طورپر مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔ تحریک انصاف کے کارکنوں نے مظاہرے میں پارٹی پرچم اُٹھا رکھے تھے جوحکومت مخالف نعرے لگاتے رہے اور گو نواز گو ، وزیر اعلی استعفی دو ، غنڈہ گردی نہیں چلے گی ، قاتلوں جواب دو خون کا حساب دو کے بھی نعرے لگائے گئے عمران ٹائیگر فورس، آئی ایس ایف ، عمران ٹائیگرس فورس ، شعبہ خواتین ، یوتھ ونگ اور تمام شعبہ جات نے پرامن مظاہرے میں شرکت کی ۔ممبر ا ن اسمبلی میاں محمود الرشید، میاں اسلم اقبال اورسعدیہ سہیل بھی اس موقع پر موجود تھے۔ احتجاج

مزید : صفحہ آخر