نوکروڑ منی لانڈرنگ کیس،مرکزی کردار توفیق بٹ کو گرین چٹ مل گئی

نوکروڑ منی لانڈرنگ کیس،مرکزی کردار توفیق بٹ کو گرین چٹ مل گئی

لاہو(ارشد محمود گھمن) لاہور ائر پورٹ کروڑوں روپے غیر ملکی کرنسی پندرہ کلو سونا ، مالیتی نو کروڑ منی لانڈرنگ کیس کے مرکزی ملزم عبدالباسط کی گرفتاری کے بعد مزید انکشافات سامنے آنے لگے،ملزم کا سگا ماموں توفیق بٹ اہم سیاسی شخصیت کا قریبی ،ائرپورٹ کے اندر سی ڈی شاپ کے علاوہ کینٹین،فوٹو کاپی مشین،فلاور شاپ،میڈیکل سٹور،اور میڈیکل کاؤنٹر کا مالک نکلا،اہم سیاسی شخصیت کی کسٹم کے اعلیٰ حکام کی سرزنش، معاملہ رفع دفع کرنے کیلئے دباؤ ، عبدالباسط کے ماموں کو گرین چٹ مل گئی ، شامل تفتیش نہ کرنے کا فیصلہ، محکمہ کسٹم حکام کا معاملہ کو پس پشت ڈالنے پر غور ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز علامہ اقبال انٹر نیشنل ائر پورٹ لاہور میں کسٹم حکام نے عبدالباسط کو پندرہ کلو سونا اور تین کروڑ بتیس لاکھ روپے نقدی غیر ملکی کرنسی دوبئی سمگل کرنے کی نیت سے گرفتار ی کے بعد مقدمہ درج کر کے چار روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کیا۔جس کی تفتیش اسسٹنٹ ڈائریکٹر ثاقب الرحمان ،چار رکنی تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ کر رہے ہیں۔ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ توفیق بٹ نامی شخصیت انٹرنیشنل لاؤنج ائر پورٹ کے اندر سی ڈی شاپ کے علاوہ کینٹین،فو ٹو سٹیٹ مشین،فلاور شاپ،میڈیکل سٹور،میڈیکل کاؤنٹر کے ملکیتی ہیں اور جس میں درجنوں افراد ڈیوٹی دے رہے ہیں، جن کو ’’ اے ایس ایف ‘‘ کی طرف سے انٹری پاس جاری کیے گئے ہیں۔ توفیق بٹ کا تعلق ایک اہم سیاسی شخصیت کے ساتھ پایا جاتا ہے۔جبکہ منی لانڈرنگ کا مرکزی ملزم عبدالباسط،توفیق بٹ کا سگا بھانجا ہے۔ذرائع نے یہ بھی بتایاکہ اتنے بڑے منی لانڈرنگ کیس کے بعد بھی محکمہ کسٹم کے اعلیٰ حکام کا توفیق بٹ اور اس کے ملازمین کے ا نٹری پاس کینسل نہ کرنا، ٹھیکہ پر دیے جانے والی شاپس کے خلاف نوٹس نہ لینا محکمہ کسٹم حکام کی بے بسی اور تو فیق بٹ کو گرین چٹ ملنا ،اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔یاد رہے کہ باوثوق ذرائع کے مطابق انکشاف ہو ا ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق ملزم عبدالباسط پندرہ سے بیس منٹ ڈیپارچر سے پہلے اپنے ماموں توفیق بٹ کی سی ڈی شاپ میں موجود پا یا گیا۔جبکہ ائر پورٹ کے اہم ذرائع کے مطابق ملزم عبدالباسط کی گرفتاری کے بعد ماموں توفیق بٹ نے محکمہ کسٹم حکام سے مک مکا کرنے کیلئے سونا کی واپسی اور غیر ملکی کرنسی بطور رشوت پیشکش کی،جس کو مسترد کر دیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ پاکستان کی اہم سیاسی شخصیت کے دباؤ پر محکمہ کسٹم حکام انکوائری کے معاملہ میں لیت و لعل سے کام لینے لگے۔ اور منی لانڈرنگ کیس کو پس پشت ڈالنے کیلئے غور شروع کر دیا۔

مزید : علاقائی