ہائی کورٹ :مناواں پولیس ٹریننگ سکول حملے کے مجرموں کے ساتھی ہجرت اللہ کی اپیل مسترد

ہائی کورٹ :مناواں پولیس ٹریننگ سکول حملے کے مجرموں کے ساتھی ہجرت اللہ کی اپیل ...
ہائی کورٹ :مناواں پولیس ٹریننگ سکول حملے کے مجرموں کے ساتھی ہجرت اللہ کی اپیل مسترد

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے مناواں پولیس ٹریننگ سکول پر حملے کے مجرموں کے ساتھی ہجرت اللہ کی ہینڈ گرینیڈ اور اسلحہ رکھنے کے مقدمے میں سزا کے خلا ف اپیل مسترد کر دی ۔2009ءمیں لاہور کے مناواں ٹریننگ سکول پر دہشت گردوں کے حملے میں درجنوں پولیس اہلکار شھید اور زخمی ہوئے جس میں تمام حملہ آور ہلاک ہوگئے تھے جبکہ ہجرت اللہ کو پولیس نے گرفتار کر لیاتھا۔ انسداد دہشت گردی نے اسلحہ اور ہینڈ گرینیڈ رکھنے پر ہجرت اللہ کو 10سال قید کی سزا سنائی تھی جس کے خلاف اس نے یہ اپیل دائر کی تھی ۔
مجرم ہجرت اللہ کی طرف سے ہائی کورٹ میں موقف اختیار کیا گیا کہ پولیس نے اپنی کارکردگی دکھانے کے لئے اسے مقدمے میں ملوث کیا جبکہ اس کا اس واقعہ سے کوئی تعلق نہیں۔ پولیس اصل ملزمان کو پکڑ نہیں سکی تو بے گناہوں کو ملوث کر دیا ماتحت عدالت نے بھی ناکافی ثبوتوں کے باوجود اسلحہ رکھنے پر دس سال قید کی سزا سنائی جو انصاف کے خلاف ہے لہذا سزا کالعدم قرار دی جائے۔ سرکاری وکیل نے دلائل دیے کہ ہجرت اللہ مناواں ٹریننگ سکول پر حملہ کرنے والوں کا ساتھی ہے اور اسے حملے کے دوران ہینڈ گرینیڈ اور اسلحہ کے ساتھ رنگے ہاتھوں گرفتار کیا گیا ہے ماتحت عدالت نے ٹھوس شواہد کی بنیاد پر سزا سنائی۔ عدالت نے وکلا کے دلائل مکمل ہونے پر ہجرت اللہ کی سزا کے خلاف اپیل مسترد کر دی۔

مزید : لاہور