محکمہ واسا کی نا اہلی، عید الفطر پرشہری صاف پانی سے محروم، شکایات پر افسروں کی دھمکیاں

محکمہ واسا کی نا اہلی، عید الفطر پرشہری صاف پانی سے محروم، شکایات پر افسروں ...

  

لاہور(سٹی رپورٹر) محکمہ واسا کی مبینہ نااہلی، عید کے ایازم میں شہریوں کو پینے کے پانی کی بلاتعطل دستیابی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔ صوبائی دارالحکومت میں عید کے تیسرے روز بھی واسا شہریوں کو پینے کا پانی فراہم کرنے میں ناکام، شہر کے کثیر علاقوں کے مکین پانی کی بوند بوند کو ترستے رہے،پانی نہ آنے کی اطلاع اور شکایات کرنے پر واسا افسران کی جانب سے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ۔ تفصیلات کے مطابق شہر کے متعدد علاقے کچا راوی روڈ، سمادھی گنگا رام، آزادی چوک سے ملحقہ آبادیوں سمیت کئی علاقے عیدالفطر کے پہلے، دوسرے اور تیسرے روز پینے کے پانی کو ترسستے رہے۔ محکمہ واسا شہریوں کو پینے کا پانی دستیاب کرنے میں مکمل طور پر ناکام رہا۔ متعلقہ افسران نے ہاتھ کھڑے کر دئیے۔ سمادھی گنگا رام سمیت دیگر علاقوں کے مکین پینے کی پانی کی عدم دستیابی پر سراپا احتجاج بنے رہے۔مکینوں دیگر علاقوں سے پینے کا پانی لانا پڑا ا یا سٹوروں سے خریدنے پر مجبور رہے۔ شہریوں کا کہنا تھا کہ پینا تو درکنار وضو کیلئے بھی پانی دستیاب نہیں۔ سارا سارا دن پانی کو ڈھونڈتے گزر جاتا رہا۔شہریوں کا کہنا تھا کہ ڈائریکٹر واسا رانا مجتبیٰ سے رابطہ کیا تو وہ مختلف بہانے بنانے لگے۔ شہریوں کے پانی کی فوری دستیابی کے اصرار پر آگ بگولا ہو گئے اور کہا کہ چاہیے آپ لوگ وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ یا صوبائی وزیر محمود الرشید سمیت کسی بھی حکام بالا کو کہہ دو ہم اپنی مرضی سے ہی پانی فراہم کریں گے۔ ایس ڈی او کچا راوی روڈ کے بھی کچھ ایسے ہی تاثرات تھے۔ مذکورہ افسران مسئلہ حل کرنے کے بجائے دھمکیاں دینے پر اتر آئے، جس پر شہری سراپا احتجاج بن گئے اور عید کے ایام میں پینے کا پانی دستیاب نہ ہونے پر حکومت اور محکمہ واسا کے حکام کو کوستے رہے۔ شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب اور ایم ڈی واسا سمیت دیگر حکام سے مطالبہ کیا کہ محکمہ واسا کے غیرذمہ دار اور غیراخلاقی رویہ رکھنے والے افسران کو محکمہ سے فارغ کیا اورنوٹس لیتے ہوئے مذکورہ علاقوں میں پینے کی پانی کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -