شیخوپورہ، حادثات واقعات میں 8افراد جاں بحق، درجنوں زخمی

  شیخوپورہ، حادثات واقعات میں 8افراد جاں بحق، درجنوں زخمی

  

قصور،شیخوپورہ،فیروزوالہمکامونکے (بیورورزپورٹ،نمائندہ پاکستان،نمائندہ خصوصی) مختلف حادثات وواقعات کے نتیجہ میں خاتون سمیت 4افراد جاں بحق۔درجن کے قریب مسافر زخمی ہوگئے۔ پولیس نے لاشوں کے پوسٹمارٹم کے بعد لاشوں کوورثاکے حوالہ کردیا۔تھانہ فیکٹری ایریاکی حدودداوکی ملیاں میں ناجائزمراسم استوارکرنے سے منع کرنے پراہلیہ نجمہ بی بی نے اپنے آشنا عرفا ن عرف بگوسے ملکر یونس مسیح کی شہہ رگ کاٹ کرلاش فصل گندم میں پھینک کرفرارہوئے۔اسی تھانہ کی حدود شیخوپورہ روڈ کی آبادی اڈا باوے داکٹی میں پان شاپ پرمخالفین شاہ رخ، کامران، ندیم عباس، فضل حسین اورقمروغیرہ نے پان شاپ کے باہربیٹھے افراد عبدالرشید،شکیل، حفیظ اور عبدالشکو روغیرہ عیدکی خوشیاں منارہے تھے کہ اچانک ملزمان نے حملہ تشدداورفائرنگ کرکے دکاندارندیم وغیرہ کوشدید زخمی کردیازخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے 29سالہ ندیم اور عبدالر شیدجاں بحق ہوگئے۔فیکٹری ایریاپولیس نے محمدجمیل کی تحریری درخواست پرسابقہ قتل اورمقدمات کی پیروی کرنیوالے مقتولین کے مخالفین ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا،سہجووال میں 35 سالہ دیور ساجد حبیب نے اپنی 28سالہ بھابھی صوبیہ کو پیسے نہ دینے پرگھر میں تیز دھار آلہ سے گردن کاٹ کر قتل کر دیا۔ چھا نگا ما نگا کے علا قہ چک 64پھلیا نی میں دیر ینہ دشمنی پر بشا ر ت نے ارشد کو فا ئر نگ کر کے اس وقت قتل کیا جب وہ مسجد سے نما ز پڑ ھ کر اپنے گھر جا رہا تھا کھڈ یا ں میں عید کی صبح نما ز کی ادا ئیگی کے لیے جا نے والے 18سا لہ حا فظ قر آ ن سمیع الر حمن کو پٹر و لنگ پو لیس کے کا نسٹیبل معصو م نے دو ستی نہ کر نے پر گو لیو ں کا نشا نہ بنا دیا حا فظ سمیع الر حمن ز خمو ں کی تا ب نہ لا تے ہو ئے دم تو ڑ گیا 18سا لہ حا فظ کی نعش گھر پہنچی تو کہرا م مچ گیا کھڈ یا ں پو لیس نے مقد مہ در ج کر کے ملز م معصو م کو گر فتا ر کر لیا۔ دیرینہ دشمنی پر مخالفین نے فائرنگ کرکے موٹروے پولیس کے سب انسپکٹر کو قتل کردیا۔بتایاگیا ہے کہ نواحی گاؤں بھانپور میں آرائیں گروپ اور گجر گروپ میں قتلوں کی دشمنی کا تنازعہ چل رہا ہے۔عید کی رات آرائیں گروپ سے تعلق رکھنے والا موٹر وے پولیس کا سب انسپکٹر میاں فیصل منیر اپنے دوستوں کے ہمراہ کار پر جارہا تھاکہ دیوان روڈ سے ملحقہ گاؤں کی سڑک پر کار اور موٹر سائیکل پر سوار لال دین،امان اللہ،فہد،کسوکی کے قاسم اور دو نامعلوم افراد نے روک کر میاں فیصل کو گاڑی سے اُتار لیا اور نصر اللہ گجر،احسان اللہ،محمد حنیف،محمد اشرف ور شاہد کے مشورہ پر اندھا دھند فائرنگ کرکے سب انسپکٹر میاں فیصل کو قتل کردیا۔

مزید :

علاقائی -