دائی کی غفلت سے بچہ دنیا میں آنے سے قبل جاں بحق

  دائی کی غفلت سے بچہ دنیا میں آنے سے قبل جاں بحق

  

کبیروالا(سٹی رپورٹر) دائی کی مبینہ سے غفلت بچہ دنیا میں آنے سے قبل ماں کے پیٹ میں جاں بحق،متاثرین نے حصول انصاف اور قانونی کارروائی کے لئے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کبیروالا اور پولیس تھانہ سٹی کبیروالا کو تحریری درخواست دے دی۔تفصیل کے مطابق معروف سیاسی وسماجی شخصیت مولانا عبدالمجید انور نے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کبیروالا اور پولیس(بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

تھانہ سٹی کبیروالا کو قانونی کارروائی اور حصول انصاف کیلئے دی گئی اپنی تحریری درخواستوں میں موقف اختیار کیا کہ ان کے علاقہ میں دائی ارشاد مائی زوجہ رجب علی نے اپنی رہائشگاہ پر زچہ بچہ سنٹر بنارکھا ہے اور خود کووہ مستندلیڈی ڈاکٹر ظاہر کرکے علاقے کی سادہ لوح لوگوں کو لوٹ رہی ہے جبکہ حقیقت میں وہ ایک غیر مستند عطائی دائی ہے۔درخواست گزار کے مطابق اسکی بیوی کے ہاں بچے کی پیدائش ہونے کے قریب تھی۔گزشتہ روز4بجے سہ پہر درخواست گزار اپنی ہمشیرہ کے ہمراہ اپنی بیوی کو لیکر مشورہ کیلئے مذکورہ دائی کے پاس گئے تو اس نے چیک اپ کے بعد تسلی دی کہ نارمل کیس ہے،میں خود ہی ڈیلیوری کرلوں گی،پریشان ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔لیکن درخواست گزار اور اسکی ہمشیرہ کے بار بار منع کرنے اور کسی اچھے ہسپتال میں مستند لیڈی ڈاکٹر کے بارے میں پوچھا مگر مذکورہ دائی نے ایک نہ سنی اور اپنی حرص ولالچ میں ڈیلیوری کا کام شروع کردیا،مذکورہ دائی کے تاخیری حربوں کے نتیجے رات 11بجے کے قریب بچے کی مردہ حالت میں پیدا ہوا۔درخواست گزار کے مطابق مذکورہ دائی نے اپنی لالچ اور حرص کیلئے جان بوجھ اور دیدہ دانستہ اپنی ہوس پوری کرنے کیلئے اس کے نومولود بچے کو جان سے مارا ہے۔

جاں بحق

مزید :

ملتان صفحہ آخر -