بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو کیا واقعی وزیراعظم عمران خان نے ڈائریکٹر حج تعینات کر دیا ہے ؟ اصل حقیقت کھل کر سامنے آ گئی

بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو کیا واقعی وزیراعظم عمران خان نے ...
بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو کیا واقعی وزیراعظم عمران خان نے ڈائریکٹر حج تعینات کر دیا ہے ؟ اصل حقیقت کھل کر سامنے آ گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر ایک خبر گردش کر رہی ہے کہ خاتون اول بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو وزیراعظم عمران خان نے مبینہ طور پر ڈائریکٹر حج تعینات کر دیا ہے ، اس خبر کی حقیقت اب کھل کر سامنے آ گئی ہے جس کے مطابق یہ جھوٹی اور بے بنیاد افواہیں ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد سے تعلق رکھنے والے صحافی ” فہیم اشرف “ نے اس خبر پر تحقیق کرتے ہوئے اس کی اصل حقیقت ڈھونڈ نکالی ہے جس کے بارے میں انہوں نے اپنے یوٹیوب چینل پر تفصیلات جاری کی ہیں ۔ صحافی کا کہناتھا کہ کل سے ایک بڑی خبر ڈسکس ہو رہی ہے کہ بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو وزیراعظم نے ڈائریکٹر حج تعینات کر دیا ہے،ساتھ ہی طرح طرح کی باتیں بھی کی جارہی ہیں تاہم جب میں نے یہ پوسٹیں دیکھیں کہ اس پر نامی گرامی صحافیوں نے ٹویٹس بھی کر رکھی تھیں اور یہ واٹس ایپ پر بھی شیئر ہو رہی تھیں ۔مجھے آفس سے بھی کال کہ اس خبر کے بارے میں معلومات حاصل کریں ، میں نے وزارت مذہبی اور وزیراعظم سے متعلق خبروں پر کام کرتاہوں ، میری ذمہ داری تھی کہ میں اس کو چیک کروں اور حقیقت جانوں ۔

صحافی فہیم اشرف کا کہناتھا کہ میں نے وزارت مذہبی امور کے ترجمان عمران صدیقی سے رابطہ کیا تو انہوں نے واضح الفاظ میں انکار کیا اور کہا کہ ایسی کوئی خبر نہیں ہے ، عیدکی چھٹیاں بھی ہیں اور میرے علم میں ایسی کوئی بات نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ میں تھوڑا شک میں پڑ گیا کہ ہو سکتا ہے کہ یہ خبر حقیقت ہو اور وہ مجھ سے کچھ چھپا رہے ہوں ،اس کے بعد میں نے سیکریٹر ی مذہبی امور مشتاق احمد کو کال کی اور ان سے پوچھا کہ کیا ایسا کچھ ہے کہ وفاقی حکومت یا پھر وزارت مذہبی امور نے خاور مانیکا کو ڈائریکٹر حج تعینات کر دیاہے ؟انہوں نے بھی واضح الفاظ میں کہا کہ یہ بالکل جھوٹی خبر ہے ۔

صحافی کے مطابق وزارت مذہبی امور کے سیکریٹری امور نے بتایا کہ وزارت کی جانب سے نہ تو کوئی ایسی سمری وزیراعظم کو بھیجی گئی ہے اور نہ ہی ایسا کوئی عہدہ ہمارے پاس خالی ہے ،ڈائریکٹر حج اور مدینہ اپنے عہدوں پر موجود ہیں جبکہ ڈی جی حج بھی اپنی ذمہ داریاں انجام دے رہے ہیں ، ان کی تعیناتی طریقہ کار کے مطابق ہوئی ہے ۔

سیکریٹری نے بتایا کہ ڈائریکٹر کی تعیناتی کیلئے دس افراد کے انٹرویو ہوتے ہیں ان میں سے ٹاپ تھری کے نام وزیراعظم کو بھجوائے جاتے ہیں اور پھر اس میں سے تعیناتی کی جاتی ہے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -