چین میں ایک ہزار سال پرانا میاں بیوی کا مقبرہ دریافت، اس میں موت کے بعد ان کے عشق لڑانے کے لیے کیا بندوبست کیا گیا تھا؟ دیکھ کر سائنسدان بھی حیران رہ گئے

چین میں ایک ہزار سال پرانا میاں بیوی کا مقبرہ دریافت، اس میں موت کے بعد ان کے ...
چین میں ایک ہزار سال پرانا میاں بیوی کا مقبرہ دریافت، اس میں موت کے بعد ان کے عشق لڑانے کے لیے کیا بندوبست کیا گیا تھا؟ دیکھ کر سائنسدان بھی حیران رہ گئے

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) وسطی چین میں کھدائی کے دوران ایک میاں بیوی کا ہزار سال پرانا مقبرہ دریافت ہو گیا جس میں دونوں کے موت کے بعد بھی ایک دوسرے سے ملنے کے لیے ایسا انتظام کیا گیا تھا کہ دیکھ کر ماہرین بھی دنگ رہ گئے۔ میل آن لائن کے مطابق ورکرز اس جگہ پر ننگ ژیانگ شاﺅ شن موٹروے کی تعمیر کے لیے کھدائی کر رہے تھے کہ نیچے مقبرے کی دریافت ہو گئی جس پر ہنان آرکائیولوجیکل انسٹیٹیوٹ کے ماہرین کو بلا لیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق جب ماہرین کی نگرانی میں مزید کھدائی کی گئی تو مقبرے میں دو قبریں نکل آئیں جن میں سے ایک میں شوہر اور دوسرے میں اس کی بیوی کو دفن کیا گیا تھا اور ان دو قبروں کے درمیان سرنگ نما راستہ رکھا گیا تھا تاکہ مرنے کے بعد بھی دونوں ایک دوسرے سے ملتے رہیں۔

رپورٹ کے مطابق یہ مقبرہ تنگ جیاوان نامی قدیم قبرستان میں دریافت ہوا جو اب موٹروے کی زد میں آ گیا ہے۔ ان میاں بیوی کی قبریں اور ان کے فرش پختہ اینٹوں سے بنائے گئے تھے اور اینٹوں سے ہی دونوں میتوں کے لیے تکیے بھی بنائے ہوئے تھے۔ دونوں کے ڈھانچے اب بھی اپنی اپنی قبر میں پڑے تھے۔ اس مقبرے کی حدود سے کھدائی کے دوران کئی طرح کے برتن اور دیگر چیزیں بھی دریافت ہوئیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس میاں بیوی کی موت سلطنت ناردرن سانگ کے دور میں ہوئی۔ یہ سلطنت 960ءسے 1127ءتک قائم رہی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -