وہ 2 بڑے ہسپتال جہاں آکسیجن اور بستر کم پڑے کا خدشہ ظاہر کردیا گیا

وہ 2 بڑے ہسپتال جہاں آکسیجن اور بستر کم پڑے کا خدشہ ظاہر کردیا گیا
وہ 2 بڑے ہسپتال جہاں آکسیجن اور بستر کم پڑے کا خدشہ ظاہر کردیا گیا

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن)  خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور کے 2 بڑے ہسپتالوں کی انتظامیہ نے کورونا کے مریضوں میں اضافے کی وجہ سے آکسیجن  اور بستروں میں کمی  کا اندیشہ ظاہر کردیا۔

پشاور کے جن ہسپتالوں میں آکسیجن اور بستروں میں کمی کا اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے ان میں خیبر ٹیچنگ ہسپتال اور حیات آباد میڈیکل کمپلیکس شامل ہیں۔ خیبر ٹیچنگ ہسپتال کی انتظامیہ کے مطابق کورونا سے متاثرہ مریضوں کیلئے ہسپتال میں 55 بیڈز مختص ہیں جب کہ 41 مریض زیر علاج ہیں جس کی وجہ سے آنے والے دنوں میں بیڈز کی کمی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

دوسری جانب  حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں کورونا کے مریضوں کیلئے 90 بیڈز مختص ہیں جب کہ اس وقت کورونا کے 85 مریض زیر علاج ہیں تاہم ایمرجنسی میں کورونا کے مریضوں کیلئے مزید 360 بیڈز مختص ہوسکتے ہیں۔

 ہسپتال انتظامیہ کے مطابق کورونا کے ایک مریض کو آکسیجن کے 1 سے 2 سلنڈر کی یومیہ ضرورت ہوتی ہے، اگر حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں مریضوں کی صورتحال یہی رہی تو آکسیجن کی کمی کا بھی سامنا ہو سکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -کورونا وائرس -