پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کو والدین کیساتھ جانے کی اجازت

  پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کو والدین کیساتھ جانے کی اجازت

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے رکشہ ڈرائیور سے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی عائشہ کو والدین کیساتھ جانے کی اجازت دیتے ہوئے حبس بے جا کی درخواست نمٹا دی،ایڈیشنل سیشن جج نے کیس کی سماعت شروع کی تو درخواست گزارساغر نے موقف اختیارکیا کہ اس نے عائشہ سے پسند کی شادی کی ہے، اس کے سسر نے بیوی عائشہ کو غیر قانونی حراست میں رکھا ہوا ہے،عدالت سے استدعاہے کہ اس کی بیوی کو بازیاب کرکے شوہر کے ساتھ جانے کی اجازت دی جائے،عدالتی حکم پر لڑکی کو عدالت میں پیش کیا گیا تو اس نے بیان دیا کہ اسے دھوکا دہی سے ساغر نے نکاح کیاہے،وہ اپنے والدین کے ساتھ رہنا چاہتی ہے،جس پر عدالت نے مذکورہ بالاحکم جاری کرتے ہوئے درخواست نمٹا دی۔

مزید :

علاقائی -