ضمانت منسوخ،لیگی ایم پی اے میاں نویدعلی لاہور ہائیکورٹ سے گرفتار

  ضمانت منسوخ،لیگی ایم پی اے میاں نویدعلی لاہور ہائیکورٹ سے گرفتار

  

پاکپتن،عارفوالا (نامہ نگار) پاکپتن پولیس نے ایم پی اے میاں نویدعلی کوہائی کورٹ کی جانب سے درخواست ضمانت منسوخ ہونے پر گرفتار کر لیا۔ تفصیل کے مطابق  مسلم لیگ (ن) کے ایم پی اے میاں نویدعلی اورسابق اسسٹنٹ کمشنر خاور بشیر کے درمیان6ماہ قبل دوران ڈیوٹی تھپڑ اوراغواء کا معاملہ لاہورہائی کورٹ کے جسٹس شہرام سرورکی عدالت میں زیرسماعت تھاجس میں ایم پی اے میاں نویدعلی نے درخواست ضمانت دائرکرکھی تھی جس پرہائی کورٹ کی جانب سے سماعت کے بعددرخواست ضمانت منسوخ کردی گئی جبکہ ان کے والدرانااحمدعلی آرائیں اورغلام مصطفےٰ مارکیٹ ٹھیکیدارکی ضمانت کنفرم کردی گئی جبکہ میاں نویدعلی ایم پی اے کوانچارج انویسٹی گیشن تھانہ سٹی پاکپتن محمدشاہدنزیرنے پولیس پارٹی کے ہمراہ ہائی کورٹ لاہورسے گرفتار کیا۔ انچارج انویسٹی گیشن انسپکٹرمحمدشاہدنذیرنے کہا کہ میرٹ پرتفتیش جاری رکھتے ہوئے ملزم کی گرفتاری ہوئی کسی بھی مقدمہ میں بلاتفریق میرٹ پرتفتیش جاری رہے گی۔

ایم پی اے گرفتار

مزید :

پشاورصفحہ آخر -