تحصیل بار صدہ کی جانب سے ضم اضلاع میں اے ڈی آر قانون مسترد

تحصیل بار صدہ کی جانب سے ضم اضلاع میں اے ڈی آر قانون مسترد

  

پشاور(نیوزرپورٹر)تحصیل بار ایسو سی ایشن صدہ ضلع کرم نے ضم اضلاع کیلئے صوبائی حکومت کی جانب سے اے ڈی ار قانون کو مسترد کر دیا ہے اور اسے ایف سی ار کی دوسری شکل قرار دیا ہے اس حوالے سے گزشتہ روز صدہ تحصیل بار ایسو سیایشن کا اجلاس زیر صدارات ایڈوکیٹ اسد خان  منعقد ہوا جسمیں نائب صدر عمران علی شاہ بنگش اور جنرل سیکرٹری نعمت اللہ منگل سمیت کثیر تعداد میں وکلاء نے شرکت کی اجلاس کے دوران صوبائی حکومت کی جانب سے تنازعات کے متبادل حل کیلئے نئے قانون اے ڈی ار کے جاری اعلامیہ پر تفصیلی بحث ہوئی اور اسکو  ضم اضلاع کی عوام کی حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہا کہ عوام کی حقو ق کیلئے ہر محا ذپر لڑنے اور اخری حد تک جانے کو تیار ہے اس مسلہ کو عوامی مفاد پر اجاگر کرنے کیلئے عوامی میدان میں جانے کا فیصلہ کیا ہے اور موجود حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے خبرادار کیا کہ ضم شدہ اضلاع کو تجربہ گاہ بنانے نہیں دینگے اور ایسو سی ایشن بار جلد اس بارے اپنا لائحہ عمل پیش کرینگے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -