خوشدل خان تاجر برادری کا نیشنل پریس کلب صحافیوں سے اظہار یکجہتی 

  خوشدل خان تاجر برادری کا نیشنل پریس کلب صحافیوں سے اظہار یکجہتی 

  

 بنوں (ڈسٹرکٹ رپورٹر)خیبرپختونخوا بار کونسل چیئرمین /سابق ڈپٹی سپیکر صوبائی اسمبلی و ایم پی اے خوشدل خان ایڈووکیٹ تاجر برادری اور نیشنل پریس کلب (رجسٹرڈ) بنوں کے صحافیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے بنوں پہنچ گئے_ سابق ڈپٹی سپیکر ایم پی اے خوشدل خان ایڈووکیٹ نے  ضلعی انتظامیہ کی جانب سے صحافی ہدایت اللہ جرنلسٹ،متحدہ انجمن تاجران بنوں کے جنرل سیکرٹری غلام قیباز خان اور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری بنوں کا دفتر غیر قانونی سیل کرنے پر ان کا مقدمہ صوبائی اسمبلی کے فلور پر لڑنے کا اعلان کر دیا _تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا بار کونسل چیئرمین و سابق ڈپٹی سپیکر صوبائی اسمبلی ایم پی اے خوشدل خان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری بنوں و متحدہ انجمن تاجران بنوں کا دفتر غیر قانونی سیل کرنے اور نیشنل پریس کلب (رجسٹرڈ) بنوں کے فنانس سیکرٹری ہدایت اللہ جرنلسٹ پر بے جا ایف ائی ار درج پر تاجروں اور صحافیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے بنوں پہنچے _ بنوں پہنچنے پر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری بنوں کے صدر سلیم الرحمن، نائب صدر شاہ وزیر خان، متحدہ انجمن تاجران بنوں کے صدر ڈاکٹر عبدالروف قریشی اور نیشنل پریس کلب (رجسٹرڈ) بنوں کے فنانس سیکرٹری ہدایت اللہ جرنلسٹ،وکلا ودیگر مشران نے ان کا پر تپاک استقبال کیا، اس موقع پر تاجر برادری وفد نے بنوں میں آٹا، چینی، سکینڈل،ضلعی انتظامیہ کی جانب سے تاجر و صحافی پر بے جا ایف آئی آر درج کرنے، الاٹمنٹ شدہ دوکانات کو غیر قانونی طور پر مسمار کرنے اور عدالتی سٹے کے باوجود مارکیٹیں گرانے سمیت مسائل پر ان کو تفصیلی بریفنگ دی _تاجروں اور صحافیوں وفد سے ملاقات کے بعد خیبرپختونخوا بار کونسل چیئرمین سابق صوبائی ڈپٹی سپیکر ایم پی اے خوشدل خان نے ضلعی انتظامیہ کے خلاف ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بنوں میں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے غریب دوکانوں کو الاٹ شدہ دوکانات کو بغیر نوٹس دینے، عدالتی سٹے کے باوجود مسمار کرنے، تاجروں کو دبانے کے لئے چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری بنوں کا دفتر بغیر نوٹس اور ٹی ایم اے عملے تالہ توڑنے کے بعد سرکاری تالہ لگانے اور صحافی ہدایت اللہ جرنلسٹ پر من گھڑت ایف ائی ار درج کرنے کی پرزور مزمت کرتے ہیں، تاجروں اور صحافیوں کا مقدمہ نہ صرف صوبائی اسمبلی فلور پر بلکہ ہائی کورٹ میں بھی لڑے گے، وکلا برادری تاجروں اور صحافیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے _ایک طرف حکومت پاکستان میں آزادی صحافت کی آزادی پر تو دعوے کر رہی ہے لیکن حقیقت میں پاکستان میں صحافت آزاد نہیں، ضلعی انتظامیہ کی جانب سے تاجر و صحافی پر جھوٹا ایف آئی آر درج کرنا آزادی صحافت پر براہ راست حملہ ہے، جب صحافی معاشرے میں مسائل یا کرپشن کی نشاندہی کرتے ہیں تو ان کو ہراساں کرنے اور سچ لکھنے سے روکنے کے لئے حکومت و ضلعی انتظامیہ ان پر من گھڑت ایف آئی آر درج کرتے ہیں،  صوبائی اسمبلی کے تمام سیاسی پارلیمانی لیڈروں نے نیشنل پریس کلب (رجسٹرڈ) بنوں کے فنانس سیکرٹری ہدایت اللہ جرنلسٹ اور متحدہ انجمن تاجران بنوں کے جنرل سیکرٹری غلام قیباز خان کی گرفتاری اور اٹا،چینی سکینڈل پر تحریک التوا سپیکر صوبائی اسمبلی میں جمع کرائی ہے، اس معاملے پر سپیکر نے تفصیلی ڈسکشن کے لئے تاریخ مقرر کی ہے، اس معاملے کی تہہ تک جائے گے، صوبائی اسمبلی میں بحث کے بعد اس پر صوبائی اسمبلی ارکان کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دینگے،ایک طرف وزیراعظم عمران خان ملکی معیشت کی مضبوطی اور آزادی صحافت پر لیکچر دیتے ہیں تو دوسری طرف حکومت تاجروں کو تنگ کرنے، صحافیوں پر بے جا ایف آئی آر درج کرتے ہیں، اب یہ سلسلہ نہیں چلے گا، اس ملک میں نالائق اور سلیکٹڈ ختم چلنے نہیں دینگے، کرپٹ ضلعی انتظامیہ بنوں اپنے کرپشن کی داستانیں چھپانے کے لئے مختلف قسم کے حربے استعمال کر رہی ہے، حکومت ان کو لگام دیں _آخر میں انہوں نے ضلعی انتظامیہ بنوں سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ تاجر و صحافی پر درج ایف ائی ار کو فوری ختم کرنے اور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری بنوں و متحدہ انجمن تاجران بنوں کا دفتر فوری کھولے،

مزید :

پشاورصفحہ آخر -