جیلوں کے نظام کو جدید خطوط پراستوا ر کیا جائیگا: شفیع اللہ خان

  جیلوں کے نظام کو جدید خطوط پراستوا ر کیا جائیگا: شفیع اللہ خان

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے جیل خانہ جات شفیع اللہ خان نے کہا ہے کہ صوبے کے جیلوں کے نظام کو مزید بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ انہیں جدید خطوط پر استوار کیا جائے گا اور قیدیوں کو مفید شہری بنانے کیلئے جامع حکمت عملی وضع کی جائے گی جبکہ صوبے میں خواتین قیدیوں کیلئے علیحدہ جیل کا قیام بھی عمل میں لایا جا رہا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے عہدے کا چارج لینے کے بعد محکمہ جیل خانہ جات میں محکمے کے حوالے سے دی جانے والی بریفنگ کے دوران کیا اس موقع پر معاون خصوصی برائے آبنوشی شکیل خان، انسپکٹر جنرل آف جیل خانہ جات خالد عباس، ڈپٹی ڈائریکٹر جیل خانہ جات حشمت خان اور دیگر افسران بھی موجود تھے محکمہ جیل خانہ جات کے اعلیٰ حکام نے معاون خصوصی کو تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے صوبے کے جیلوں کے بارے میں انہیں آگاہ کیا جس پر معاو ن خصوصی شفیع اللہ خان نے اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کے وژن کے مطابق ہر حال میں اداروں سے کرپشن کا خاتمہ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ محکمے کی بہتری کیلئے ضروری اصلاحات لائیں گے جن سے محکمے کی کارکردگی مزید بہتر ہو سکیں گی انہوں نے کہا کہ قیدیوں کو مفید شہری بنانے کیلئے انہیں دینی اور دنیاوی تعلیم سے آراستہ کرنے کے ساتھ دور حاضر کے تقا ضوں کے مطابق ہنر سکھایا جائے گا۔معاون خصوصی نے سالانہ ترقیاتی بجٹ کے حوالے سے کہا کہ 2021-22کے بجٹ میں محکمے کی ترقیاتی منصوبوں کے لئے خطیر رقوم مختص کریں گے تاکہ جاری منصوبے اور نئے منصوبوں پر کام بلا تعطل جاری ہو انہوں نے کہا کہ ضم شدہ قبائلی اضلاع کے جیلوں میں قیدیوں کودی جانے والی سہولیات کا جائزہ لینے کیلئے دورہ بھی کریں گے۔ انہوں نے محکمے کے حکام کو ہدایت کی کہ وہ جنگی بنیادوں پر ایمانداری محنت و لگن کے ساتھ کام کرے تاہم محکمے میں سزا و جزا کے عمل پر بھی سختی سے عمل در آمد کیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -