کرونا حملہ، انسپکٹر سمیت9افراد جاں بحق، صورتحال سنگین

کرونا حملہ، انسپکٹر سمیت9افراد جاں بحق، صورتحال سنگین

  

ملتان، بہاولپور، ڈیرہ، رحیم یارخان، گگو منڈی، ٹبہ سلطان پور، ڈاہرانوالہ(خصوصی رپورٹر، بیورو رپورٹ، ڈسٹرکٹ رپورٹر، سٹی رپورٹر، نامہ نگار، نمائندہ پاکستان) نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں   مبتلا 04 مزید   مریض جاں بحق،اموات کی مجموعی  تعداد 786 ہو گئی  زیر علاج کورونا کے مریضوں کی  تعداد 92ہو گئی ،22مریضوں کی حالت تشویشناک،  شبہ میں 65 مریض زیر علاج،ادھر کورونا آئی سو لیشن کے دس وارڈز میں بستروں کی تعداد 331 کر دی گئی  ، 236 پر مریض،97 وینٹی لیٹرز  میں سے 19وینٹی لیٹر خالی,ادھر چلڈرن کمپلیکس میں بھی کورونا وائرس میں مبتلا دو بچے زیر علاج, فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد  نے بتایا کہ  نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملتان کی رہائشی 55 سالہ امینہ خاتون، 50 سالہ آئشہ تبسم، 50 سالہ ریحانہ بیگم اور 50 سالہ مجیدہ بی بی نے دم توڑ دیا ،یوں یکم اپریل 2020  سے 26 مئی 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 786 ہو گئی ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 92 ہو گئی ہے جن میں سے 64 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے جبکہ زیر علاج 22مریضوں  کی حالت تشویشناک  ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 65 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 6ہزار 460افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 470 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر نشتر ہسپتال کا کورونا آئی سو لیشن وارڈ مریضوں سے بھر گیا ہے جہاں اس وقت 236مریض زیر علاج ہیں  جبکہ  مختص 97 وینٹی لیٹرز میں سے 19 خالی رہ گئے ہیں جبکہ کورونا آئی سو لیشن بلاک میں بستروں کی تعداد  331 کر دی گئی ہے،جن میں سے  95 بستر خالی ہیں،ادھر چلڈرن کمپلیکس میں زیر علاج میاں چنوں کے 4 سالہ عبدالمنان اور چیچہ وطنی کے 9 سالہ ریحان میں کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے باعث تاحال علاج جاری ہے فرائض کی ادائیگی کے دوران کورونا کا شکار انسپکٹرزندگی کی بازی ہار گیا‘ڈی پی او علی الصبح شہید انسپکٹر کے گھر پہنچ گئے،نماز جنازہ میں شرکت کی،تفصیلات کے مطابق محکمانہ فرائض کی ادائیگی کے سلسلہ میں معاشرتی امن کے قیام کی عملی کوششوں کے دوران کورونا کا شکار ہونیوالے بہاولپور پولیس کے انسپکٹر طاہر محمود نے زندگی کی بازی ہار کر جام شہادت نوش کرلیا،ڈی پی او محمد فیصل کامران علی الصبح شہید انسپکٹر کے گھر پہنچ گئے،ہاشمی گارڈن میں شہید کی نماز جنازہ میں شرکت کی،لواحقین سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے ڈی پی او فیصل کامران نے کہا کہ طاہر محمود نے محکمانہ فرائض کی انجام دہی اور معاشرتی امن اور قانون کی حکمرانی کیلئے جس فرض شناسی کا مظاہرہ کیا اسے ریاست،قانون اور قانون پسند طبقات ہمیشہ یاد رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ شہید انسپکٹر کی فیملی میرے لئے ا نتہائی محترم ہے فیملی کو کسی وقت بھی کوئی مسئلہ درپیش ہو تو مجھ سے براہ رابطہ کرے میں خود مسائل حل کروں گایہ خدمت میرے لئے قابل  فخر و رشک ہو گی۔ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کرونا وارڈ میں داخل دو اور مریض چل بسے23مزید نئے کیسزمثبت آگئے تفصیلات کے مطابق فوکل پرسن ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل دو اور مریض کوٹ چھٹہ کا غلام یٰسین اورجام پور کی رہائشی فاطمہ جاں بحق ہوگئے جبکہ 23 نئے مریضوں کے مزید کیسز مثبت آگئے ہیں 8کے نیگیٹو اور11 مریضوں میں کرونا کا خدشہ پایا جارہا ہے جبکہ تین مریضوں کی حالت انتہائی خطرناک اور 9مریض ونٹیلیٹرز پر ہیں۔ضلع بھر میں کرونا کے وار نہ تھم سکے، مزید 47افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوگئی،جبکہ 2کرونا متاثرہ ہسپتال میں زندگی کی بازی ہارگئے، 48کروناوائرس متاثرہ کروناکوشکست دے کر صحت یاب ہوگئے، کرونا سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد5349ہوگئی، جبکہ ہلاکتوں کی تعداد203تک جا پہنچی، صحت یاب ہوجانے والے کرونا متاثرین کی تعداد 4734ہوگئی، 412کرونا متاثرہ ہسپتال وہوم آئسولیشن میں زیرعلاج ہیں۔کرونا وائرس کی تیسری لہر نے گرین سٹی چک نمبر187۔ای بی میں کئی جانیں لے لیں وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد میں اضافہ پر ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آ فیسر بورے والا ڈاکٹر شاہد اقبال ڈاکٹر محمد ادریس چوہدری نے اپنی ٹیم کے ہمراہ فوری کاروائی کرتے ہوئے گزشتہ روز تقریباً300افراد کے سیمپل لے کر لیبارٹری بھجوا دیئے ہیں ڈاکٹر شاہد اقبال نے کہا کہ وہ ویکسین آر ایچ سی گگو منڈی میں لگائی جا رہی ہے اہل علاقہ فوری طور پر اپنی ویکسینیشن کروائیں علاقہ کے لوگوں نے مطالبہ کیا کہ گگو منڈی میں کم از کم 15دن لاک ڈاؤن لگایا جائے انہوں نے کہا کہ لیبارٹری سے رزلٹ آنے کے بعد مریضوں کی تعداد میں اضافہ پر لاک ڈاؤن لگایا جا سکتا ہے انہوں نے اپنی کمپین میں اہل علاقہ سے اپیل کی کہ گورنمنٹ کی طرف سے جاری ایس او پیز پر عمل کر کے اپنی اور دوسروں کی جان بچائیں۔ڈپٹی کمشنر بہاول پور عرفان علی کاٹھیا نے گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ماڈل ٹاؤن اے میں قائم کورونا ویکسینیشن سنٹر کا دورہ کیا اور وہاں لوگوں کو کورونا ویکسینیشن کی دی جانے والی سہولیات کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر محمد اقبال مکوال، فوکل پرسن ڈاکٹر راؤ محمد ذاکر، ہیلتھ آفیسرز اور پیرامیڈیکل سٹاف موجود تھا۔ ڈپٹی کمشنر نے کورونا ویکسینیشن سنٹر کے مختلف سیکشن چیک کئے اور وہاں ویکسینیشن کے لئے آئے ہوئے افراد سے ملاقات کی اور انہیں کورونا کی مفت ویکسینیشن کی سہولت کی فراہمی کے حوالہ سے دریافت کیا۔ بعد ازاں ڈپٹی کمشنر نے خانقاہ شریف میں قائم سہولت بازار کا معائنہ کیا اور پھل، سبزیوں اور دیگر اشیائے خوردونوش کے سٹالز چیک کئے  حکو مت طلباء وطالبات اور نوجوانوں کو کرونا جیسی خطرناک وباء سے بچانے کے لئے کرونا ویکسین لگانے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لئے آج سے باقائدہ طور پررجسٹریشن کا آغاز کیا جائے گا19سال اور اس سے زائدعمر کے نوجوان خود رجسٹرڈ کرواکرکوڈ آنے کے بعدکسی بھی قریبی کرونا ویکسی نیشن سنٹر میں جا کر اپنی ویکسین کرواسکیں گے واضع رہے کہ حکو مت کی جانب سے مرحلہ وار تمام پاکستانیوں کو کرونا ویکسین مفت لگائی جارہی ہے تاکہ کرونا کو ہمیشہ ہمیشہ کے لئے شکست دے کر ملک کو ترقی کی طرف گامزن کیا جاسکے۔سب تحصیل ڈاہرانوالہ اور اس کیقریبی چکوک کی لا کھوں کی آبادی ہونے کے باوجود کورونا ویکسین سنٹر سے محروم ہے.عوام کو کرونا ویکسینیشن کے لیے میلوں کا سفر طے کر کے چشتیاں جانا پڑتا ہے.ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی بہاولنگر نے رورل ہیلتھ سنٹر ڈاہرانوالہ میں بھی ویکسینیشن سنٹر کی منظوری دی گء لیکن انتظامیہ کی پھرتیاں صرف بینروں تک محدود ہیں اور ویکسنیشن سنٹر کو فعال نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے عوام پریشانی کا شکار ہیں کورونا وائرس کی تیسری لہر انتہائی خطرناک  اور گورنمنٹ کی طرف سے واضح احکامات کے باوجود  ڈاہرانوالہ رورل ہیلتھ سنٹر میں ویکسنیشن سنڑ مکمل غیر فعال ہے.ویکسنیشن کے لیے آنے والے تمام مرد و خواتین کو چشتیاں بھیجا جا رہا ہے.عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہانتظامیہ کی جانب سے الگ کورونا ویکسین سنٹر توقائم کر دیا گیا بڑے بڑے بینر بھی آویزاں ہو گئے مگر نہ کرونا وائرس کی ویکسین پہنچی ہے اور نہ ہی عملہ ڈاہرانوالہ کی لاکھوں کی آبادی افسران بالااور سیاسی شخصیات کی بے حسی اور عدم توجہ کا شکار ہے.عوام کو کرونا ویکسین لگوانے کے لئے گھنٹوں کا سفر طے کرکے  چشتیاں یا ہارون آباد زلیل وخوار ہونا پڑتا ہے پچاس ساٹھ سال کی عمر  کے لوگ شدید مشکلات کا شکار ہیں.کونا وائرس کی انتہائی تشویشناک صورتحال کی  روک تھام کے لئے صوبائی وزیر صحت پنجاب سے ڈاہرانوالہ کی غریب عوام نے ڈاہرانوالہ پریس کلب کے توسعت سے حکومت سے پر زور اپیل کی ہے کہ ڈاہرانوالہ رورل ہیلتھ سنٹر کو ویکسین  فراہم کرکے مکمل فعال کیا جائے کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں کمی کے باعث میڈیکل اور ڈینٹل،نرسنگ کالج،پیرا میڈیکل،الائیڈ ہیلتھ سائنسز سکول،دیگر طبی تعلیمی ادارے آج 27 مئی(جمعرات)سے دوبارہ کھل جائیں گے۔پنجاب کے سرکاری و پرائیویٹ میڈیکل و ڈینٹل تعلیمی ادارے کورونا وائرس کی تیسری لہر کے سبب مارچ 2021 میں بند کردیے گئے تھے۔سرکاری و پرائیویٹ میڈیکل و ڈینٹل تعلیمی اداروں میں تدریسی سرگرمیاں بحال کردی گئی ہیں۔محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نے نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔ایم بی بی ایس تھرڈ،فورتھ اور فائنل پروفیشنل،بی ڈی ایس تھرڈ اور فورتھ پروفیشنل کے طلبا و طالبات کورونا وائرس سے بچا کے لئے احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کرتے ہوئے آن کیمپس(اپنے تعلیمی اداروں میں آسکیں گے)کلاسیں اٹینڈ کریں گے۔نشتر میڈیکل یونیورسٹی ملتان میں تھرڈ،فورتھ،فائنل ائیر کی کلینیکل کلاسیں اور پریکٹیکل 31 مئی 2021 سے شروع ہوں گے۔

کرونا وائرس

مزید :

صفحہ اول -