جرمن ولاگر کرسٹین بیٹزمین نے منگنی ٹوٹنے کے بعد اداکارہ زویا ناصر کے لیے الوداعی پیغام جاری کردیا

جرمن ولاگر کرسٹین بیٹزمین نے منگنی ٹوٹنے کے بعد اداکارہ زویا ناصر کے لیے ...
جرمن ولاگر کرسٹین بیٹزمین نے منگنی ٹوٹنے کے بعد اداکارہ زویا ناصر کے لیے الوداعی پیغام جاری کردیا
سورس:   Instagram/christianbetzmann

  

برلن(مانیٹرنگ ڈیسک) جرمن یوٹیوبر و ولاگر کرسٹین بیٹزمین نے اداکارہ زویا ناصر کے ساتھ منگنی ٹوٹنے کے بعد ان کے لیے الوداعی سوشل میڈیا پوسٹ کر ڈالی۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق کرسٹین بیٹزمین، جو کرس بیٹزمین کے نام سے شہرت رکھتے ہیں، نے اپنی اس پوسٹ میں محبت بانٹنے پر زویا ناصر کا شکریہ اداکرتے ہوئے لکھا ہے کہ ”زویا ناصر کے ساتھ جو وقت گزرا، میں اسے کبھی بھلا نہ پاﺅں گا۔ “انہوں نے زویا کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ”تمہارے ساتھ بہترین وقت گزارا۔ یہ ڈیڑھ سال کا عرصہ مجھے ہمیشہ یاد رہے گا۔ بدقسمتی سے زندگی کے متعلق ہم دونوں کے خیالات مختلف تھے اور ہم مختلف طرح کے مستقبل کے حامی تھے، جس کی وجہ سے ہمیں الگ ہونا پڑ گیا۔“

رپورٹ کے مطابق زویا اور کرس نے رواں سال فروری میں ویلنٹائنز ڈے پر منگنی کی تھی۔ اس سے قبل کرس نے رواں سال کے آغاز میں اسلام قبول کیا تھا۔ وہ دونوں کرس کے اسلام قبول کرنے اور منگنی کرنے سے پہلے بھی باہم تعلق میں تھے اور دونوں ویڈیوز میں اکٹھے دکھائی دیتے تھے۔ تاہم 22مئی کو زویا ناصر نے اچانک انسٹاگرام پوسٹ کے ذریعے کرس کے ساتھ اپنی منگنی ختم ہونے کے متعلق مداحوں کو بتا کر حیران کر دیا۔ زویا نے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ ”کرس بیٹزمین کے اچانک اسلام اور پاکستان کے متعلق خیالات تبدیل ہو گئے تھے، جس کی وجہ سے میں منگنی ختم کرنے پر مجبور ہوئی۔“ تاہم اس کے جواب میں کرس نے بھی ایک وضاحتی پوسٹ میں بتایا کہ ”میں نے نہ تو مذہب اسلام اور نہ ہی پاکستان کے متعلق کوئی غلط بات کی ہے۔ البتہ میں پاکستانی مسائل کے بارے میں فکرمند رہتا ہوں، اس کا غلط مطلب لیا گیا کہ شاید میں پاکستان سے نفرت کرنے لگا ہوں۔“

مزید :

تفریح -