ہندو تنظیم نے خواجہ معین الدین چشتی کے مزار پر شیولنگ ہونے کا دعویٰ کردیا

ہندو تنظیم نے خواجہ معین الدین چشتی کے مزار پر شیولنگ ہونے کا دعویٰ کردیا
ہندو تنظیم نے خواجہ معین الدین چشتی کے مزار پر شیولنگ ہونے کا دعویٰ کردیا

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ہندوتوا تنظیم "مہارانا پرتاپ سینا” کے صدر نے خواجہ معین الدین چشتیؒ کی درگاہ میں بھی شیولنگ ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے مودی سرکار اور راجستھان کے وزیراعلیٰ کو خط لکھ دیا ہے۔مہارانا پرتاپ سینا کے صدر خط میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ خواجہ معین الدین چشتیؒ کی درگاہ کے احاطے میں بھی ”شیولنگ” موجود ہے، اس لئے حکومت کو چاہیے کہ اس کی فوری طور پر تحقیقات کرائے۔گدی نشین درگاہ اجمیر شریف اور چشتی فاؤنڈیشن کے چیئرمین حاجی سید سلمان چشتی نے اس خط پر اپنا شدید ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ اجمیر شریف دنیا کی کسی بھی یادگار سے ماورا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ یہ زندہ روایات مقدس تعلیمات کا ایک مجسمہ ہے جس کی مثال حضرت خواجہ معین الدین چشتیؒ نے سب کے ساتھ غیر مشروط محبت کے ساتھ دی ہے۔ ایسی کہانیوں کو میڈیا پر پھیلانا ناقابل معافی گناہ ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -