وزیراعظم کی لیفٹننٹ جنرل راشد محمود اور روحیل شریف سے الگ الگ ملاقاتیں،جلد نئی تقرریوں کا اعلان متوقع

وزیراعظم کی لیفٹننٹ جنرل راشد محمود اور روحیل شریف سے الگ الگ ملاقاتیں،جلد ...
 وزیراعظم کی لیفٹننٹ جنرل راشد محمود اور روحیل شریف سے الگ الگ ملاقاتیں،جلد نئی تقرریوں کا اعلان متوقع

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) چیف آف آرمی سٹاف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کے تقرر کے سلسلے میں وزیراعظم نواز شریف نے باقاعدہ طورپر اعلیٰ عسکری قیادت اور ممکنہ سپہ سالاروں سے ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کردیاہے جن میں سے کسی کا تقرر کا کیاجائے گا۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم ہاﺅس میں لیفٹیننٹ جنرل راشد محمود اور لیفٹیننٹ جنرل روحیل شریف نے نواز شریف سے الگ الگ ملاقات کی جس دوران ملکی سلامتی اور پیشہ وارانہ امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ راشد محمود چیف آف جنرل سٹاف بھی ہیں جبکہ روحیل شریف آئی جی ٹریننگ اینڈایویلوایشن ہیں ۔ ٹی وی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم انٹرویو کے طورپر مختلف افسران سے ملاقاتیںکررہے ہیں اور ون آن ون ملاقات میں فیصلہ ہوگاکہ وہ کس افسر پر اعتماد کا اظہارکرتے ہیں کیونکہ گذشتہ روز وفاقی وزیراطلاعات نے اشارہ دیاتھاکہ آئین و قانون کے مطابق فیصلہ ہوگا، وزیراعظم کو بھی آئین کچھ اختیارات دے گا، وہ اُن کا استعمال کریں گے جس سے بعض ماہرین کاخیال ہے کہ وزیراعظم سنیارٹی لسٹ کو نظراندازبھی کرسکتے ہیں۔بتایاگیاہے کہ سنیارٹی کے حساب سے پہلانمبر ہارون کاہے ، اُنہیں چھوڑ کر دوسرے اور تیسرے نمبر کے افسران سے ملاقاتیں کررہے ہیں جبکہ چوتھے اور پانچویں نمبر کے افسران سے بھی ملاقاتیںکرسکتے ہیں ۔چیف آف آرمی سٹاف جنرل اشفاق پرویز کیانی نے جمعرات کو ریٹائرہوناہے اور امکان ظاہرکیاجارہاہے کہ آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کسی بھی وقت وزیراعظم آرمی چیف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی یا کسی ایک کا اعلان کرسکتے ہیں۔

مزید : اسلام آباد