عمران اور دستی کے بعد دفاع پاکستان کونسل بھی میدان میں آگئی ، ڈرون حملوں اور نیٹوسپلائی کیخلاف احتجاج کا اعلان

عمران اور دستی کے بعد دفاع پاکستان کونسل بھی میدان میں آگئی ، ڈرون حملوں اور ...
عمران اور دستی کے بعد دفاع پاکستان کونسل بھی میدان میں آگئی ، ڈرون حملوں اور نیٹوسپلائی کیخلاف احتجاج کا اعلان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)تحریک انصاف اور جمشید دستی کے بعد دفاع پاکستان کونسل نے امریکی ڈرون حملوں اور نیٹو سپلائی کے خلاف میدان میں آگئی ہے اورجمعہ29نومبر کو ملک گیر یوم احتجاج اور یکم دسمبر کومال روڈ لاہور پر جلسے کا اعلان کر دیا ¾خطبات جمعہ میں علماءکرام مذمتی قراردادیں پیش کی جائیں گی،مختلف شہروں میں مظاہرے بھی کئے جائیں گے،اتوار کو نیلا گنبد سے مسجد شہداءتک ریلی نکالی جائے گاجس سے دفاع پاکستان کونسل میں شامل جماعتوں کے قائدین خطاب کریں گے۔ان خیالات کا اظہار دفاع پاکستا ن کونسل میں شامل جماعتوں کے مرکزی رہنماﺅں،جماعة الدعوة کے مرکزی رہنما مولانا امیر حمزہ،جماعت اسلامی کے ڈاکٹر فرید احمد پراچہ،مجلس احرار کے مولانا محمد یوسف احرار، جماعت اہلحدیث کے سربراہ حافظ عبدالغفار روپڑی،جمعیت علماءپاکستان کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر امجد حسین چستی،تنظیم اسلامی کے رہنما مرزا محمد ایوب بیگ،متحدہ جمعیت اہلحدیث کے رہنما محمد نعیم بادشاہ،اہلست والجماعت کے محمد اکرم عثمانی،تنظیم العارفین سلطان باہو کے غلام رسول،جمعیت علماءاسلام(س) کے مولانا محمد عاصم مخدوم،جمعیت اہلحدیث پاکستا ن کے حافظ محمد علی یزدانی ،جمعیت علماءپاکستان کے پیر اختر رسول قادری،نے لاہور پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جماعة الدعوة کے رہنمامحمد یحییٰ مجاہد،حافظ خالد ولید،سید عبدالوحید شاہ،قاری احمد وقاص و دیگر بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ نیٹو سپلائی کا روکنا ملک و قوم اور پاکستان کی سلامتی کے لئے ناگزیر ہو چکا ہے ۔ ،دینی سیاسی جماعتیں احتجاج کے ذریعے حکومت پردباو ڈال سکتی ہے سپلائی روکنا وفاقی حکومت کی ذمہ داری ہے۔ڈرون حملے جہاں عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہیں تو وہیں پاکستان کی سلامتی و خود مختاری پر حملہ ہیں جن میں بے گناہ اور معصوم لوگوں کی جانیں جاتی ہیں۔ملک گیر احتجاج کے ذریعہ امریکہ کو اس بات پر مجبو رکریں گے کہ وہ ڈرون حملے بند کرے ۔ملک کی تمام جماعتیں اس بات پر متحد ہیں کہ پاکستان میں امریکی بالادستی کو کسی صورت قبول نہیں کیا جائےگا۔پاکستان ایک خود مختار ملک ہے دفاع پاکستان کونسل وطن عزیز کی سلامتی کے لئے میدان عمل میں آ چکی ہے ۔حکومت فوج کو ڈرون گرانے کا حکم دے ۔کسی بھی جارحیت کی صورت میں قوم پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہو گی۔انہوں نے کہا کہ نیٹو سپلائی اور ڈرون حملوں کے خلاف تحریک کو تیز کرنے ضرورت ہے،امریکہ ونیٹو دوستی کے روپ میں پاکستان کو غیر مستحکم کر رہے ہیں۔قبائلی علاقوں کے بعد ہنگو میںبندوبستی علاقے پر ڈرون حملہ نے واضح کر دیا کہ امریکہ جہاں چاہے پاکستان میں ڈرو ن حملہ کر دے۔دفاع پاکستان کونسل نے سلالہ چیک پوسٹ پر امریکی حملے میں فوج کے جوانوں کی شہادت کے بعد ملک گیر تحریک چلائی تھی جس کے نتیجہ میں سات ماہ تک نیٹو سپلائی بند رہی تھی۔انہوں نے کہا کہ دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق نے پشاور ہائیکورٹ میں نیٹو سپلائی و ڈرون حملوں کے خلاف پٹیشن بھی دائر کر دی ہے۔ڈرون حملوں و نیٹو سپلائی کے خلاف ملک گیر تحریک کے سلسلہ میں جمعہ کو علماءکرام خطبات جمعہ میں مذمتی قراردادیں پیش کریں گے اور امریکہ و نیٹو کی جارحیت کو قوم کے سامنے بے نقاب کریں گے۔نماز جمعہ کے بعد ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اتوار یکم دسمبر کو لاہور میں مال روڈ پر عظیم الشان کاروان نکالا جائے گا اور جلسہ عام کا انعقاد کیا جائے گا جس میں تمام تر مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد بڑی تعداد میں شریک ہوں گے ۔کارواں کے اختتام پر مسجد شہداءکے سامنے جلسہ عام سے دفاع پاکستان کونسل میں شامل جماعتوں کے مرکزی قائدین و رہنما خطاب کریں گے۔نہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا انڈیا سے دوستی کا بیا ن کشمیری شہداءکے خون سے غداری اور انکے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہے۔ جب  تک کشمیر کو مسئلہ حل نہیں ہوتا بھارت کے ساتھ دوستی وتجارت نہیں ہو سکتی۔انڈیا میں نریندر مودی جو سانحہ احمد آباد گجرات کا ذمہ دار ہے جس میں ہزاروں مسلمانوں کو زندہ جلا دیا گیا تھا اس کو وزیر اعظم کا پروٹو کول ملنا شروع ہو گیا ہے ۔حکومت انڈیا کے ساتھ دوستی کی بجائے مسلمانوں کے قاتل نریندر مودی کے کردار کو دنیا کے سامنے واضح کرے۔

مزید : لاہور /اہم خبریں