صدر نے جسٹس تصدق جیلانی کی بطور چیف جسٹس تقرری کی منظوری دے دی

صدر نے جسٹس تصدق جیلانی کی بطور چیف جسٹس تقرری کی منظوری دے دی
صدر نے جسٹس تصدق جیلانی کی بطور چیف جسٹس تقرری کی منظوری دے دی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) صدر مملکت ممنون حسین نے جسٹس تصدق جیلانی کی بطور چیف جسٹس تقرری کی منظوری دے دی ہے، یہ منظوری صدر ممنون حسین نے وزیراعظم نواز شریف کی ایڈوائس اور آئین کے آرٹیکل 175 اے کی شق 3 کے تحت دی ہے۔ ذرائع کے مطابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری 11 دسمبر کو ریٹائر ہو رہے ہیں اور ان کی جگہ 12 دسمبر کو نئے چیف جسٹس کا تقرر کیا جانا ہے۔ صدر ممنون حسین نے وزیراعظم نواز شریف کی ایڈوائس پر جسٹس تصدیق جیلانی کی بطور چیف جسٹس تقرری کی منظوری دے دی ہے، وزیراعظم نواز شریف نے جسٹس تصدق حسین جیلانی کو سپریم کورٹ کا سینئر ترین جج ہونے کے باعث سفارش کی تھی۔ جسٹس تصدق حسین جیلانی سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج ہیں اور اس وقت قائم مقام چیف الیکشن کمشنر تعینات ہیں جبکہ وہ 5 جولائی 2014 کو ریٹائر ہوں گے۔ جسٹس تصدق حسین جیلانی نے کہا ہے کہ آئین اور قانون کی بالادستی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ واضح رہے کہ ایمرجنسی کے دوران جسٹس تصدق جیلانی کو گھر بھیج دیا گیا تھا جبکہ انہوں نے پی سی او کے تحت حلف نہیں اٹھایا تھا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں