نئے دور کا آغاز

نئے دور کا آغاز
نئے دور کا آغاز

  

فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری پاکستان کی سب سے بڑی تجارتی تنظیم ہے جو ملک کے تمام چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور بڑی تجارتی تنظیموں کی نمائندگی کرتی ہے۔ 1950ء میں اس کا قیام عمل میں آیا تھا جس کے بعد اگرچہ اسے بہت سے نشیب و فراز کا سامنا کرنا پڑا لیکن جب سے اس کی قیادت یونائیٹڈ بزنس مین گروپ کے ہاتھ آئی ہے تب سے یہ تنظیم ترقی کی نئی سے نئی منازل طے کرتی جا رہی ہے اس نے نجی شعبے کے استحکام و مسائل کے حل، غیر ملکی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی، ملک میں اقتصادی سرگرمیوں کو بڑھانے اور برآمدات کو فروغ دینے کے لئے ٹھوس کوششیں کی ہیں ،جن کا اعتراف حکومتی حلقے بھی کرتے ہیں، چنانچہ اب یہ بہت ضروری ہو گیا ہے کہ اس اہم ادارے کی باگ ڈور کاروباری برادری کے حقیقی نمائندوں کے ہاتھوں میں ہی رہے تاکہ یہ نہ صرف کاروباری برادری کی خدمت کرے بلکہ ملکی معیشت کے استحکام کے لئے بھی اپنا بہترین کردار ادا کرتا رہے۔

حسب سابق سال رواں کے ماہ دسمبر کے اختتام پر فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے انتخابات عمل میں آ رہے ہیں۔ ایس ایم نصیر اور یونائیٹڈ بزنس مین گروپ کے دیگر لیڈرز نے جو انتھک محنت کی ہے، اسے مد نظر رکھتے ہوئے پورے دعوے سے کہا جا سکتا ہے کہ ان انتخابات میں یونائیٹڈ بزنس مین گروپ95فیصد سے بھی زائد نشستوں پر کامیابی حاصل کر کے ایک نئی تاریخ رقم کرے گا اور نیا سال نئی خوشیوں و امیدوں کے ساتھ طلوع ہوگا۔ میں خود بھی 2001-02 ء میں اس باوقار ادارے کے صدر کے عہدے پر فائز رہ چکا ہوں اور یہ اسی ادارے کے پلیٹ فارم سے کاروباری برادری کی خدمت کا صلہ ہے کہ آج میں سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر کے عہدے پر فائز ہوں۔ مَیں فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے وقار، عزت اور حرمت کو بڑی اچھی طرح جانتا ہوں۔ مجھے یہ بھی معلوم ہے کہ صنعتی و کاروباری شعبے کے ساتھ ساتھ ملک کی معیشت کے لئے یہ ادارہ کس قدر اہمیت کا حامل ہے ،اسی لئے میری یہ خواہش ہے کہ اس ادارے کو محب وطن کاروباری افراد ہی سنبھالے رہیں تاکہ اس کا وقار و احترام برقرار رہے اور یہ لوگ ان لوگوں کے ہاتھوں میں کھلونا نہ بنیں جو اگرچہ ہیں تو کاروباری شعبے سے ہی وابستہ، لیکن ان کی زندگی کا پہلا اور آخری مقصد ذاتی مفادات کے لئے اقتدار کا حصول ہے، خواہ وہ صنعتی و تجارتی شعبے کے مفادات کو گروی رکھ کر ہی حاصل کیوں نہ ہوں۔

فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے یونائیٹڈ بزنس مین گروپ سے تعلق رکھنے والے تمام قائدین نے اس ادارے کے ذریعے ان تمام سرگرمیوں کو فروغ دیا جن سے نہ صرف کاروباری برادری کو فائدہ پہنچا، بلکہ ملک کی معاشی بنیادیں بھی مستحکم ہوئیں۔ غیر ملکی سرمایہ کاری معاشی استحکام کے لئے وہی کردار ادا کرتی ہے جو عمارت کی مضبوطی کے لئے سیمنٹ ،چنانچہ یونائیٹڈ بزنس مین گروپ نے اس سلسلے میں خاص اقدامات اٹھائے۔ ہمارے وفود نے دنیا بھر کے دورے کئے اور سب سے زیادہ توجہ اپنے پیارے وطن کی ساکھ کو زیادہ سے زیادہ بہتر کرنے کی جانب مبذول رکھی۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کیا کہ پاکستان آئیں اور چاہے اپنی صنعتیں لگائیں یا پاکستانی صنعتکاروں کے ساتھ مل کر مشترکہ منصوبہ سازی کریں، دونوں صورتوں میں انہیں بہت فائدہ ہوگا۔ بین الاقوامی میلوں اور نمائشوں میں شرکت کو یقینی بنایا تاکہ دنیا کو پاکستانی مصنوعات کی خوبیوں سے آگاہ کیا جا سکے۔ بیرون ملک متعین پاکستانی سفارتخانوں سے مسلسل رابطہ رکھا گیا تاکہ پاکستان کی کاروباری برادری کو عالمی سطح پر موجود تجارتی مواقع سے آگاہی حاصل ہو سکے اور نہ صرف وہ خود ان مواقع سے فائدہ اٹھائیں بلکہ ملکی برآمدات کو بھی فروغ حاصل ہو جبکہ غیر ملکی چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور دیگر تجارتی اداروں سے معلومات کے تبادلے کو بھی یقینی بنایا گیا۔

یہاں یہ ذکر کر تا چلوں کہ فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا کنفیڈریشن آف ایشیا پیسفک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، اسلامک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، ای سی او چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور انڈیا پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری سے الحاق بھی ہے۔ موجودہ حالات کے تناظر میں یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں ہے کہ 2016ء چیلنجز سے بھرپور سال ہوگا اور کاروباری برادری کو توانائی کے بحران، بجلی، پٹرول، گیس کی زیادہ قیمتوں، صنعتوں کی زیادہ پیداواری لاگت اور سیاسی عدم استحکام سمیت دیگر بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ظاہر ہے کہ تاجر برادری کا سب سے بڑا پلیٹ فارم ہونے کی حیثیت س یفیڈریشن آف پاکستان اینڈ انڈسٹری پر یہ مسائل حل کرانے کے لئے بہت دباؤ ہوگا لیکن مجھے قومی امید ہے کہ فیڈریشن کی نئی قیادت اپنی بہترین صلاحیتوں کی بدولت اس امتحان میں سرخرو ہو جائے گی اور یہ مسائل حل کرنے کے لئے بھرپور آواز بلند کرے گی۔

مزید :

کالم -