پاک فوج کے جوان بھارتی فوج کو سبق سکھا سکتے ہیں

پاک فوج کے جوان بھارتی فوج کو سبق سکھا سکتے ہیں
 پاک فوج کے جوان بھارتی فوج کو سبق سکھا سکتے ہیں

وزیراعظم نوازشریف نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے اعزاز میں دیئے گئے الوداعی عشائیہ میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میںآرمی چیف اور پاک فوج کے کردار کو سراہا۔جنرل راحیل شریف نے بطورآرمی چیف شاندارخدمات انجام دیں۔ جنرل راحیل کا خاندان ملکی دفاعی خدمات کے نام سے جانا جاتا ہے۔ جنرل راحیل شریف کو غیر معمولی قابلیت کی بنا پر آرمی چیف مقرر کیا گیا اور راحیل شریف نے محنت اور لگن سے خود کو بے مثال سپہ سالار ثابت کیا۔ انہوں نے کہاکہ جنرل راحیل شریف کی زیر قیادت فوج نے دہشت گردوں کو ہر محاذ پر شکست دی۔ بہترین سپہ سالار کے اسٹریٹجک مشوروں کو ہمیشہ اپنایا اور مستقبل میں بھی ان سے مشاورت کرتے رہیں گے ۔ مادر وطن کی حفاظت کے لئے پاک فوج کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ مسلح افواج کے آپریشن ضرب عضب کی پوری دنیا معترف ہے۔ انسداد دہشت گردی کے لئے ہمارے عزم سے دنیا واقف ہے۔ میں نے ہمیشہ جنرل راحیل شریف کے سٹرٹیجک مشوروں کو اپنایا ہے۔ جنرل راحیل شریف میں بھرپور قائدانہ صلاحیتیں ہیں، ان کی انتھک کوششوں کے عزم کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ آج کا پاکستان 2013ء کے مقابلے میں زیادہ محفوظ ہے۔ جنرل راحیل شریف نے ہمیشہ آگے بڑھ کر قیادت فراہم کی۔ جنرل راحیل شریف کی قیادت میں پاکستان کی مسلح افواج نے نہ صرف بیرونی خطرات، بلکہ دہشت گردی کے عفریت کا مقابلہ کیا۔ ہم نے کامیابی کے ساتھ ریاست کی رٹ کو قائم کیا اور ہماری خود مختاری کے تحت آنے والے ایک ایک انچ علاقے میں اقتدار اعلیٰ کو بحال کیا۔ ہم یہاں جنرل راحیل شریف کی ملک اور مسلح افواج کے لئے سالہا سال کی شاندار خدمات کے اعتراف اور تشکر کے لئے جمع ہوئے ہیں۔ جنرل راحیل شریف کا تعلق ایسے خاندان سے ہے جس کی فوج کے لئے بے شمار خدمات ہیں۔ میجر عزیز بھٹی شہید اور میجر شبیر شریف شہید کی شہادت اور نشان حیدر کا اعزاز ان کے خاندان کے لئے منفرد اعزاز ہے۔ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھارت کی جانب سے سرجیکل سٹرائیکس کے دعوے کو ’’جھوٹا ڈرامہ‘‘ قرار دیتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ اگر ہم نے سرجیکل سٹرائیک کی تو بھارتی نصاب میں اپنی آئندہ نسلوں کو پاک فوج کے قصے پڑھائے جائیں گے۔ پاک فوج کے جوان بھارتی فوج کو سبق سکھا سکتے ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف لڑنے والی پاک آرمی دنیا کی مضبوط ترین فوج ہے، جس نے دہشت گردی کا ناسور ہمیشہ کے لئے دفن کردیا۔ فاٹا میں دہشت گردی کے خاتمے میں فوج اور ایف سی نے نمایاں کام انجام دیا۔ جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے دور میں پاک فوج کا مورال بلند کیا اور وہ چاہتے ہیں کہ فوج اور عوام کے درمیان رشتہ برقرار رہے۔ضرب عضب آپریشن کی وجہ سے قبائلی علاقوں میں امن قائم ہوگیا ہے اور ترقیاتی کام بھی جاری ہیں۔

چیف مارشل سہیل امان نے کہا ہے کہ پاکستان کی تینوں مسلح افواج کی جنگی تربیت بہت معیاری اور اعلیٰ ہے۔ پاک فضائیہ دشمن کو منہ توڑ جواب دینے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔ ضرب عضب ایک مکمل جنگ ہے، اس میں کسی کو شک نہیں ہونا چاہئے۔ فضائیہ اس جنگ میں شامل ہے۔ بھارتی عزائم سے بخوبی واقف ہیں، اگر اس نے کوئی قدم اٹھایا تو جانتے ہیں اسے کہاں سے پکڑنا ہے۔ ہماری صلاحیتوں پر کسی کو شک نہیں ہونا چاہئے۔ شاید ہماری سول قیادت کو ضرب عضب سے متعلق اتنا معلوم نہ ہو، لیکن ہماری فوج ہر روز ایک جنگ لڑتی ہے۔ اللہ نہ کرے کہ بھارت سے کبھی جنگ ہو، لیکن اگر جنگ ہوئی تو ہمیں کوئی پریشانی نہیں۔ بھارت کے خلاف تینوں مسلح افواج تیار ہیں۔ بھارت کے ہتھکنڈوں سے دباؤ میں آنے والے نہیں۔ اُڑی واقعے کے بعد پاکستان نے بڑے سادہ انداز میں تمام تیاریاں کرلی تھیں، اس لئے بھارت تحمل میں رہ کر کشمیر کے معاملے کو حل اور باقی معاملات کو بہتر کرے تو اچھا ہے۔

بھارت کو دیگر معاملات پر اصولوں کے تحت بات کرنی چاہئے۔ نیول چیف ایڈمرل ذکاء اللہ نے کہا بھارتی آبدوز کا معاملہ غیرمعمولی تھا، جسے کچھ دن پھنسا کر رکھنے کے بعد واپس جانے پر مجبور کر دیا۔ امید ہے آئندہ بھارت یہ جرات نہیں کرے گا۔ کراچی شپ یارڈ نے بہت ترقی کی ہے، جہاں میزائل بوٹس بن رہی ہیں۔ سی پیک بہت بڑا منصوبہ ہے جو جلد ہی آپریشنل ہو جائے گا۔ اس حوالے سے اپنی ذمہ داریوں سے پوری طرح آگاہ ہیں۔ اور انہیں احسن طریقے سے پوراکریں گے۔ پاکستان نیوی اور میری ٹائم مل کر پانیوں میں بھارت کی شرارتیں روک رہے ہیں، آئندہ کسی بھارتی آبدوز کو یہاں آنے کی جرات نہیں ہوگی۔

مزید : کالم

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...