پاکستان اربوں روپے خرچ کرکے غیر ملکی بیج درآمد کرتا ہے، ڈاکٹر اقرار احمد خان

پاکستان اربوں روپے خرچ کرکے غیر ملکی بیج درآمد کرتا ہے، ڈاکٹر اقرار احمد خان

فیصل آباد (آن لائن)زرعی یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹر اقراراحمد خاں نے کہاہے کہ پاکستان اربوں روپے خرچ کرکے سبزیوں ‘ پھولوں اور زرعی اجناس کے بیج ہالینڈ‘ بھارت اورتھائی لینڈ سے درآمد کرتا ہے تاہم بین الاقوامی گروپ کے ساتھ سمجھوتے کے بعد وہ اُمید رکھتے ہیں کہ پاکستان میں سیڈ ٹیکنالوجی منتقل کرنے کی راہ ہموار ہوگی۔ ملک میں چھوٹے کسان روایتی طریقے سے اگلی فصل کا بیج تیار کرتے ہیں جس کی وجہ سے بیشتر بیجوں میں نمی کی شرح ضرورت سے زائد ہونے کی وجہ سے کھیت میں پودوں کی تعداد پوری نہ ہونے سے پیداوار کم ہوتی ہے۔ پاکستان میں بیج کو خشک کرنا اور سٹوریج کے دوران اس میں نمی کی شرح کو مقررہ حد سے زیادہ نہ ہونے دیناہی کامیاب سیڈ ٹیکنالوجی ہے جس سے بیج کا اُگاؤ یقینی بنایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ معاہدے کے بعد یونیورسٹی میں سیڈ ٹیکنالوجی میں تحقیقات کوفروغ حاصل ہوگا اور نچلی سطح پر بیجو ں کو خشک کرنے کے ساتھ ساتھ نمی کی مقررہ شرح کی مینجمنٹ رواج پائے گی ۔ آن لائن کے مطابق بعدازاں زرعی یونیورسٹی فیصل آباد اور رینو ریسرچ گروپ تھائی لینڈ کے مابین باہمی تعاون کے سمجھوتے پر دستخط ہوئے ہیں جس کے مطابق دونوں ادارے پاکستان میں سیڈ انڈسٹری کی بڑھتی ہوئی ضروریات کے تناظر میں مقامی طو رپر بیج کو خشک کرنے اور طویل عرصے تک بہترین کوالٹی کے ساتھ محفوظ رکھنے کے پروٹوکول انتظامات‘ ڈرائی چین آلات‘ کیمیکلز کی درآمد اور افرادی قوت کی تربیت کیلئے ایک دوسرے سے تعاون کریں گے۔

معاہدے پر رینوریسرچ گروپ کے ایگزیکٹو پریزیڈنٹ مسٹر جون وان ایس بروک اور یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرڈاکٹر اقراراحمدخاں نے دستخط کئے۔ معاہدے کی دستاویزات کے مطابق دونوں ادارے معاہدے کی شقوں پر عملدرآمد کیلئے اپنے فوکل پرسن مقرر کریں گے جو مشترکہ اہداف کے تعین اور کامیابی کیلئے حکمت عملی طے کریں گے اور پاکستان میں درکار ٹیکنالوجی کے تعارف اور درآمد کیلئے ماسٹر پلان ترتیب دیں گے۔ دونوں اداروں کے سربراہان نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ سیڈ ٹیکنالوجی ورکنگ گروپ تشکیل دے کر دونوں اداروں کے مابین اشتراک عمل سے پاکستان میں منگوائی جانیوالی ٹیکنالوجی کے بارے میں تربیتی ورکشاپ اور پروٹوکول بھی طے کریں گے۔ رینوگروپ یونیورسٹی میں سیڈ ٹیکنالوجی کے طلبہ تک جدید ترین معلومات اور ٹیکنالوجی پہنچانے کیلئے متعدد ورکشاپ‘ سیمینار اور آگہی پروگرام منعقد کرنے کے ساتھ ساتھ یونیورسٹی میں ریسرچ و ڈویلپمنٹ پروگرامز میں بھی شریک ہوگا۔ رینو گروپ پاکستان میں سیڈ ٹیکنالوجی کو نچلی سطح پر متعارف کروانے میں بھی یونیورسٹی کی مدد کرے گا ،تقریب میں یونیورسٹی آف کیلی فورنیا ڈیوس کے ڈائریکٹر سیڈ و بائیوٹیکنالوجی سینٹر ڈاکٹر کین بریڈ فورڈ ‘ڈائریکٹر بیرونی روابط پروفیسر ڈاکٹر رشید احمد‘ چیئرمین پی بی جی ڈاکٹر حفیظ احمد صداقت‘ چیف آف پارٹی پاک امریکہ مرکز اعلیٰ تعلیم برائے خوراک و زراعت ڈاکٹر بشیر احمد‘ ڈپٹی چیف آف پارٹی ڈاکٹر سلطان حبیب اللہ‘ پراجیکٹ کے پرنسپل انوسٹی گیٹر ڈاکٹر عرفان افضل و دیگر بھی موجود تھے۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...