سوشل سیکیورٹی ہسپتال رائیونڈ طبی سہولیات کی فراہمی میں ناکام ، فیکٹری ملازمین سراپا احتجاج

سوشل سیکیورٹی ہسپتال رائیونڈ طبی سہولیات کی فراہمی میں ناکام ، فیکٹری ...

مانگا منڈی (نمائندہ خصوصی)میاں شہباز شریف کی کاوشوں سے رائے ونڈ روڈ پر بنایا گیا سوشل سیکیورٹی ہسپتال فیکٹری ملازمین اور ورکروں کو طبی سہولیات کی فراہمی میں ناکام ،غریب فیکٹری ملازمین بیماریوں میں مبتلا،غریب ملازمین اور ورکروں کا محکمہ صحت کے اعلی احکام اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق محمد اکرم،عبدالجبار،سکینہ بی بی ،رضیہ بی بی نے بتایا کہ جب ہم پرچی بنوانے کے لیے جاتے ہیں تو کاؤنٹر پر بیٹھے نوجوان اپنے موبائل سننے کی طرف توجہ دیتے ہیں۔کئی کئی گھنٹے لائن میں کھڑاکیا جاتاہے، خواتین نے بتایا کہ ڈلیوری کے لیے بھی لائن میں کھڑے ہونا پڑتا ہے بلکہ منچلے نو جوان بداخلاقی بد تمیزی بھی کرتے ہیں ڈلیوری کی پرچی بنانے والا تقریباً 9 بجے کے بعد پرچیاں بناتا ہے اگر پرچی گھنٹہ کے بعد دی جائے توڈاکٹروں کے پاس درجنوں مریضوں کے حساب سے لائن لگی ہوتی ہے اندر بیٹھے ڈاکٹر موبائل فون سے اپنے دوستوں سے باتیں کرتے رہتے ہیں بعض ڈاکٹر چائے پینے کے بہانے اپنے کمرے کا دروازہ بند کر لیتے ہیں ،فیکٹری ورکروں نے الزام لگایا کہ پرائیوٹ مریضوں سے 6 سو روپے لیکر انہیں فوری چیک کیا جاتا ہے اورہمیں نہ تو اچھی طرح چیک کیا جاتا ہے اور انہیں معمولی سی گولیاں دے کر ٹرخا دیا جاتا ہے اس کے علاوہ قیمتی ادویات ہمیشہ ہسپتال سے غائب کر دی جاتی ہیں اور میڈیکل سٹوروں پر فروخت کر دی جاتی ہیں ۔مریضوں نے مزید شکایت کی کہ ہسپتال میں بنائی گئی کینٹین میں انتہائی غیر معیاری اور ناقص اشیا ء منگے داموں فروخت کی جا رہی ہیں ۔ مانگا منڈی پریس کلب کے سر پر ست اعلی ملک ممتاز حسین نے ہسپتال کے انچارج ایم ایس او ڈاکٹر عمران راٹھور سے رابطہ کیاتو انہوں نے کہا کہ مجھے توہسپتال میں آئے اور چارج لیے ہوئے ایک ہفتہ ہوا ہیں میں بہت جلد ورکروں کی شکایت دور کروں گا جو بھی گناہگارہو گا اُس کے خلاف کاروائی کروں گا ۔ورکروں نے وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف اور محکمہ صحت کے اعلی حکام سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1