5ماہ قید رکھنے کے بعد حقانی نیٹ ورک نےچینی تاجر ڑیو ہوینگ کو رہا کردیا

5ماہ قید رکھنے کے بعد حقانی نیٹ ورک نےچینی تاجر ڑیو ہوینگ کو رہا کردیا

افغانستان(مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان میں طالبان کے حقانی نیٹ ورک نے ایک چینی تاجر ڑیو ہو ینگ کو پانچ ماہ تک قید میں رکھنے کے بعد رہا کر دیا ہے،چینی تاجرکو دارالحکومت کابل کے قریب رہا کیا گیا جس کے بعد وہ چینی سفارت خانے پہنچ گیا ہے۔

طیب اردگان سینہ تان کر مغربی ممالک کے خلاف کھڑے ہوگئے، وہ اعلان کردیا جس سے پورے یورپ کو سب سے زیادہ ڈر لگتا ہے

بیرونی میڈیا بی بی سی نیوز کے مطابق حقانی نیٹ ورک کے ایک رکن نے کہاہے کہ تاجر مسٹر ڑیو ہوینگ اپنے ایک منصوبے کے مقام کا معائنہ کر رہے تھے کہ انھیں جلال آباد کے قریب جولائی میں نامعلوم افراد نے اغوا کر لیا تھا۔وہ پہلے چینی شہری تھے جنھیں افغان طالبان نے اغوا کیا تھا لیکن طالبان کے ساتھ کئی رابطوں کے ذریعے رسائی حاصل کرنے کے بعد وہ اس کیس کو حل کر پائے ہیں۔ذرائع کے مطابق افغان طالبان نے اس چینی تاجر کی رہائی کے بدلے میں اپنے قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ بھی کیا لیکن بعد میں اپنے وہ موقف میں بہت زیادہ لچک لے آئے تھے۔تاجر مسٹر ڑیو ہوینگ کو جہاں رکھا گیا تھا وہ مقام امریکیوں نے ایک مرتبہ ڈرون کے ذریعے نشانہ بھی بنایا لیکن وہ اس میں محفوظ رہے تھے ۔

کشمیر میں ظلم سے توجہ ہٹانے کی بھارتی کوشش ناکام ، مبصرین مقبوضہ کشمیر میں رسائی مانگ رہے ہیں : ملیحہ لودھی

 سرکاری افغان اہلکار کا کہنا تھا کہ ڑیو ہوینگ کئی گروپوں سے ہوتے ہوئے حقانی نیٹ ورک تک پہنچے ،چونکہ چین نے اپنی فوج کبھی بھی افغانستان نہیں تعینات کی اسی وجہ نے اس قیدی کی رہائی میں زیادہ موافق کردار ادا کیا۔ چین کے سخت حکومتی قواعد کی وجہ سے اس چینی کے اغوا کی خبر کو ذرائع ابلاغ کی خبروں سے دور رکھا گیا تھا۔ایک طالبان رکن کے مطابق چینی باشندے کی رہائی ایک ڈیل کے ذریعے ممکن ہوئی جس میں بھاری رقم کی ادائیگی بھی ہوئی۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...