اسرائیلی پولیس نے بیت المقدس سے گرفتار 4فلسطینی بچوں کو رہا کر کے گھروں پر نظر بند کردیا ، رہایء کیلئے دو شرائط بھی عائد

اسرائیلی پولیس نے بیت المقدس سے گرفتار 4فلسطینی بچوں کو رہا کر کے گھروں پر ...

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) اسرائیلی پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس سے گرفتار کئے گئے 4فلسطینی بچوں کو رہا کرنے کے بعد ان کے گھروں پر نظر بند کردیا ہے۔ بچوں کی رہائی کیلئے کئی دوسری شرائط بھی عائد کی گئی ہیں۔وادی حلوہ انفارمیشن سینٹر کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ صہیونی پولیس نے چند روز قبل بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے چار فلسطینی بچوں عامر ولید عبدالرزاق، مہدی موسیٰ قراعین، معاذ جمال زیتون اور صالح محیسن کو گرفتار کیا گیا تھا۔ گذشتہ روز ان کی رہائی عمل میں لائی گئی مگر رہائی کے بعد انہیں بیت المقدس میں ان کے آبائی قصبے سلوان میں گھروں میں نظر بند کردیا گیا ہے۔ ان بچوں کی عمریں 13 اور 14 سال کے درمیان ہیں۔مقامی شہریوں کا کہنا ہے کہ چاروں بچوں سے صہیونی فوج نے مجموعی طور پر 5ہزار شیکل کی رقم بطور جرمانہ بھی وصول کی ہے۔ تیرہ سالہ جمال محمد قراعین کو اسرائیلی پولیس پر سنگ باری کے الزام میں حراست میں لیا گیا تھا۔ اسے کئی روز تک وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

بعد ازاں اسے ایک ہزار شیکل جرمانہ اور سات دن تک گھر میں نظر بند رہنے کی شرط پر رہا کیا گیا۔

مزید : عالمی منظر