ذیابیطس کے مریضوں کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کر گئی،ڈاکٹر احمد جمال

ذیابیطس کے مریضوں کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کر گئی،ڈاکٹر احمد جمال

لاہور(جنرل رپورٹر) ایک سروے کے مطابق ذیا بیطس کے مریضوں کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کر چکی ہے۔ یہ بیماری ذہنی دباوٗ ، موٹاپے اور ورزش کی کمی سے بڑھتی ہے۔ پاکستان میں یہ مرض روز بروز بڑھ رہا ہے۔ اس مرض کو کم کرنے کیلئے شعور اور آگہی کی بے حد ضرورت ہے۔ یہ باتیں عارف میموریل ہسپتال کے میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر احمد جمال انور صمدانی نے ہفتہٗ شوگر کیمپ کے آخری روز شوگر کے فری میڈیکل اینڈ ٹیسٹ کیمپ کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیں۔ ان کے ساتھ میڈیسن کے پروفیسر عزیزالرحمن اور ایسوسی ایٹ پروفیسر جاوید اقبال بھی موجود تھے۔

ڈاکٹر صمدانی نے مزید کہا کہ ایک وقت تھا جب اسے امیروں کی بیماری کہا جاتا تھا اور دیہاتی لوگوں کے متعلق خیال تھا کہ یہ پیدل چلتے میں سادہ غذا لیتے ہیں۔ انہیں یہ بیماری نہیں ہوسکتی مگر آج پورا ملک اس کی لپیٹ میں ہے۔ معاشی اور خاندانی پریشانیاں غذا میں ملاوٹ، غیر متوازن غذا اور دیگر مسائل ہمیں بیمار کر رہے ہیں۔ ہمیں اپنی طرف توجہ دینی ہوگی۔ اپنا خیال خود رکھنا ہوگا۔ اس کے ساتھ ساتھ لوگوں میں شعور اُجاگر کرنا ہوگا۔ اب اگر ہم عارف میموریل ہسپتال کو دیکھیں ۔ یہ لاہور سے 35کلومیٹر فیروزپور روڈ پر واقع ہے۔ اس کے اردگرد 103گاوٗں اور تقریباً 10لاکھ کی آبادی ہے۔ دیہات کے رہنے والے بھی اب اس مرض میں مبتلا ہورہے ہیں۔ اس لیے ہمارے کیمپ لگانے کا مقصد 3ماہ والا ٹیسٹ Hb A, Cاور شوگر لیول فری ٹیسٹ کرنا ہے۔ اتنی زیادہ تعداد میں لوگ آ کر اپنا شوگر لیول چیک کروا رہے ہیں بلکہ ٹیسٹ بھی کروا رہے ہیں، جو اس بیماری کے معاشرے میں پھیلنے کی نشانی ہے۔ دیہات کے رہنے والے لوگوں میں یہ شعور بیدار ہونا ہی ہماری کامیابی ہے۔ ڈاکٹر صمدانی نے مزید کہا کہ عارف میموریل ہسپتال آئندہ بھی میڈیکل کیمپ لگائے گا۔ اس کے علاوہ ماہرِ غذا فاطمہ اور نِدا رحمت نے مریضوں کو غذا کے بارے میں آگاہی دی۔ اور ایسوسی ایٹ پروفیسر آف میڈیسن ڈاکٹر جاوید اقبال نے مریضوں کا معائنہ اور ٹیسٹ کیے۔ پروفیسر آف میڈیسن ڈاکٹر عزیز الرحمن بھی اس موقع پر کیمپ میں موجود رہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...