اقوام متحدہ کنٹرول لائن پر بھارت کی شر انگیزیاں فوری بند کرائے: عمران خان

اقوام متحدہ کنٹرول لائن پر بھارت کی شر انگیزیاں فوری بند کرائے: عمران خان

اسلام آباد(اے این این)چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ جنگ بندی لائن پر بھارتی شرانگیزیاں فوری رکوائے،کنٹرول لائن کی دوسری جانب اقوام متحدہ اپنے مبصرین کو تعینات کرے۔ یہ مطالبات عمران خان کی جانب سے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بانکی مون کو لکھے گئے ایک خط میں کئے گئے۔عمران خان نے لکھا ہے کہ بھارت نے جنگ بندی لائن اور بین الاقوامی سرحد پر تعینات پاکستانی فوجیوں پر حملوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔ بھارت جوانوں پر حملوں کے علاوہ سویلین آبادی کو بھی انتہائی سفاکیت سے نشانہ بنا رہا ہے۔بین الاقوامی سرحد اور جنگ بندی لائن پر بھارتی شر انگیزیاں فوری طور پررکوائی جائیں اور جنگ بندی لائن کی دوسری جانب اقوام متحدہ کے مبصرتعینات کئے جائیں۔چیئرمین نے خط میں جنگ بندی لائین اور کشمیر میں بھارتی جارحیت کی نشاندہی کرتے ہوئے لکھا کہ اقوام متحدہ کی جانب سے بھارتی جارحیت کے تدارک کا انتظام نہ کرنا ناقابل فہم ہے۔خط میں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے لکھا گیا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر ایک عرصے سے التواء کا شکار ہے۔ بھارت کی پاکستان کے خلاف بڑھتی ہوئی شر انگیزیوں کے باعث خطے کی سلامتی اور امن کو انتہائی شدید خطرات لاحق ہیں۔انہوں نے خط میں مطالبہ کیا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کے حوالے سے اقوام متحدہ کے مبصرین مقرر کئے جائیں اور اس سلسلے میں سلامتی کونسل کے باب ہفتم کے تحت سلامتی کونسل کا فوری اجلاس طلب کیا جائے۔ عمران خان کی جانب سے لکھے گئے خط کے متن کے مطابق انہوں نے بانکی مون کو کہا ہے کہ بطور سیکرٹری جنرل یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ بین الاقوامی قوانین کے تحت عالمی امن اور سلامتی کا تحفظ یقینی بنائیں۔ چیئرمین تحریک انصاف نے کہا ہے کہ پاناما لیکس سے متعلق انگلینڈ سے اہم دستاویزات ملی ہیں، خط پر قطری شہزادے کو جرح کے لئے بلانے کا فیصلہ ابھی نہیں کیا، عدالتی فیصلہ تسلیم کریں گے، عمران خان عدالت میں خود دلائل دینے کا سوچنے لگے۔چیئرمین تحریک انصاف نے سپریم کورٹ کی کوریج کرنے والے صحافیوں سے بنی گالا رہائشگاہ پر ملاقات میں بتایا کہ پاناما لیکس کے ثبوت آ گئے ہیں، قطری شہزادے کو جرح کیلئے بلانے کا نہیں سوچا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ حکمران خاندان ذاتی کرپشن کے کیس میں سرکاری وسائل استعمال کر رہا ہے، عدالتی فیصلہ تاریخ ساز ہو گا، کیس ہارے تو الیکشن کی تیاری کریں گے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ وہ پاناما لیکس پر خود دلائل دینا چاہتے ہیں لیکن قانونی ٹریننگ کے مسائل ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاناما کا مقدمہ جیت چکے ہیں، پی ٹی آئی نے اپنا کام کر دیا، انصاف کا نظام ڈلیور نہ کرے تو کیا کر سکتے ہیں

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...