ہائیکورٹ کی 150ساکی تقریبات، یادگاری ٹکٹ کی رونمائی، تاریخی میوزیم کا افتتاح

ہائیکورٹ کی 150ساکی تقریبات، یادگاری ٹکٹ کی رونمائی، تاریخی میوزیم کا افتتاح

لاہور(نامہ نگارخصوصی )چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے عدالت عالیہ لاہو رکی 150سالہ تقریبات کے حوالے سے عدالت عالیہ کی یادگاری ٹکٹ رونمائی ی اور تاریخی میوزیم کا افتتاح کردیا۔ اس موقع پر عدالت عالیہ کے سینئر ترین جج مسٹر جسٹس شاہد حمید ڈار سمیت دیگر فاضل جج صاحبان، سپریم کورٹ بار ایسو سی ایشن کے صدر علی ظفر اور وکلاء کی بڑی تعداد تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر چیف جسٹس کا کہناتھا کہ عدالت عالیہ لاہور کی 150سالہ تقریبات صرف ججز کی نہیں ہیں بلکہ یہ وکلاء، ضلعی عدلیہ، سٹاف اور صوبے کی عوام کی تقریبات ہیں، چیف جسٹس نے میوزیم کے قیام اور یادگاری ٹکٹ کے اجراء پر عدالت عالیہ لاہو ر کے جسٹس محمد انوارالحق، جسٹس محمد فرخ عرفان خان، جسٹس سید شہباز رضوی اور جسٹس ارم سجاد گل سمیت لاہور میوزیم کی ڈائریکٹر نوشابہ اور انکی ٹیم اور پوسٹ ماسٹر جنرل پنجاب اور انکی ٹیم کو خراج تحسین پیش کیا، چیف جسٹس نے ٹکٹ کے اجراء میں اٹارنی جنرل آف پاکستان کی کاوشوں کو بھی سراہا۔ قبل ازیں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر جسٹس محمد انوار الحق نے کہا کہ لاہور ہائی کورٹ میوزیم انکا ادھورا خواب تھا ، چندی گڑھ ہائی کورٹ میں اسی طرز کا میوزیم قائم ہے۔ فاضل جج نے کہا کہ میڈیا کی وساطت سے وہ یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ جن لوگوں کے پاس عدالت عالیہ لاہور کی تاریخی اشیاء موجود ہیں وہ عدالت عالیہ سے تعاون کریں تا کہ تاریخی ورثہ کو محفوظ کیا جاسکے۔

میوزیم افتتاح

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے کہا ہے کہ بار او ر بنچ ایک نظام کے پہیے ضرور ہیں لیکن انہیں اپنی اپنی حدود میں اپنا کردار ادا کرنا ہے اور اگر کوئی جزو اپنی حدود سے تجاوز کرے گا تو مسائل جنم لیتے ہیں،بار کونسلز کا کام وکلاء کے پیشہ وارانہ معاملات کو دیکھنا ہے، سیاست کی نظام عدل میں کوئی جگہ نہیں ہے اس سے سسٹم میں خرابیاں پیدا ہو رہی ہیں، ہمارے عدالتی نظام میں بھی کمزوریا ں ہیں اگر عدالتیں قانون کے مطابق فیصلے کریں گی تو کرپشن کا ناسور جڑ سے ہی ختم ہو جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار چیف جسٹس نے عدالت عالیہ لاہور کی 150سالہ تقریبات کے حوالے سے " قانون کی حکمرانی" کے موضوع پر منعقدہ ایک کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ مقامی ہوٹل میں کانفرنس کا انعقادلاہور کی ضلعی عدلیہ کی جانب سے کیا گیا تھا جس میں مسٹر جسٹس محمد قاسم خان، مسٹر جسٹس مجاہد مستقیم احمد، مسٹر جسٹس طارق افتخار احمد، مسٹر جسٹس حبیب اللہ عامر، جسٹس (ر) فضل کریم، جسٹس (ر) اعجاز نثار، معروف قانون دان عابد حسن منٹو ، ایس ایم ظفر، رجسٹرار سید خورشید انور رضوی، ممبر انسپکشن ٹیم سردار طاہر صابراور ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نذیر احمد گجانہ سمیت جوڈیشل افسران، سول سوسائٹی کے نمائندوں اور وکلاء کی بڑی تعداد موجود تھی۔

نظام عدل،جگہ

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...