منتخب مئیر ہوں، سیاست سے کوئی تعلق نہیں ، وسیم اختر

منتخب مئیر ہوں، سیاست سے کوئی تعلق نہیں ، وسیم اختر

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مئیر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ منتخب مئیر ہوں، میرا سیاست سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ ماضی میں غلطیاں ہوئیں مگر اب وزیراعظم سے کہتا ہوں کہ کراچی کے عوام کے لیے خصوصی پیکیج دیں۔ماضی میں کسی بات سے کسی کی دل آذاری ہوئی ہو تو سچے دل سے معذرت چاہتا ہوں۔ہفتہ کو انسداد دہشت گردی عدالت میں سانحہ 12 مئی اور اشتعال انگیز تقریر کیس میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی کے مسائل بہت بڑا چیلنج ہیں۔ ماضی کی باتوں کو بھلا کر شہر کے مسائل کو حل کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں منتخب مئیر ہوں، میرا سیاست سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ ماضی میں میری کسی بات سے کسی کی دل آذاری ہوئی ہو تو سچے دل سے معذرت چاہتا ہوں۔ چوہدری نثار علی خان اور دیگر سے بھی ماضی کی باتوں پر معذرت خواہ ہوں۔پرانی باتوں کو بھلا کر شہر کی ترقی کے لئے کام کیا جائے۔ وزیراعظم سے پھر درخواست کرتا ہوں کہ کراچی کے لئے پیکج کا اعلان کریں۔کوشش کر رہے ہیں کہ کچرے سے شہریوں کی جان چھڑائی جائے۔ میئر کا سیاست سے کوئی تعلق نہیں تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ لے کر چلیں گے۔قبل ازیں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں سانحہ 12 مئی کے مقدمات کی سماعت ہوئی۔ میئر کراچی مقدمات میں نامزد انیس ملزموں کے ہمراہ پیش ہو ئے۔ عدالت میں جج اور وسیم اختر کے درمیان دلچسپ مکالمہ ہوا۔ عدالت نے وسیم اختر سے استفسار کیا کہ آپ عدالت میں کیوں آئے ہیں؟جب تک دیگر ملزموں کی ضمانتوں کی درخواستیں زیرسماعت ہیں آپ نہ آیا کریں ۔ آپ شہر کراچی کی خدمت کریں پیشی پر مت آیا کریں۔ عدالت نے میئر کراچی کی حاضری سے استثنی کی درخواست منظور کر لی۔وسیم اختر کا کہنا تھا کہ 12 مئی کے مقدمات میں نامزد ملز م فائر بریگیڈ کے ملازم ہیں ان کو معطل کر دیا گیا ہے اور تنخواہیں بھی روک لی گئی ہیں۔ جج نے ریمارکس دیے کہ آپ اپنا کام کریں۔ ملزموں کے ساتھ کیا کرنا ہے عدالت دیکھے گی۔

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...