تعلیمی ادارے ایسے طلبہ پیدا کریں جو معاشرے میں برائیوں کیخلاف لڑ سکیں :پرویز خٹک

تعلیمی ادارے ایسے طلبہ پیدا کریں جو معاشرے میں برائیوں کیخلاف لڑ سکیں :پرویز ...

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبرپختونخو اپرویز خٹک نے کہا ہے کہ موجودہ دور میں زندگی کے ہرشعبہ کو گوناں گوں چیلنجز اور حالات کا سامنا ہے جن کا مقابلہ کرنے کیلئے اجتماعی انسانی کاوشوں کی ضرورت ہے۔ یہی وجہ ہے کہ خیبرپختونخوا حکومت تعلیمی نظام کو موجودہ دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ بنانے اور تعلیمی نظام کے مقاصد کے حصول پر بھر پور توجہ دے رہی ہے۔صوبے کے تعلیمی نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے قابل عمل اصلاحات کی گئی ہیں۔ ایبٹ آباد پبلک سکول میں سالانہ یوم والدین اور تقسیم انعامات کی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے۔ صوبائی کابینہ کے اراکین حاجی قلندر خان لودھی، عبدالحق، ایم این اے ڈاکٹر اظہر جدون ، ایم پی اے و چیئرمین ڈیڈک ایبٹ آباد سردار محمد ادریس ، نامور شخصیات ، فیکلٹی ممبران اور والدین اور طلباء و طالبات کی کثیر تعداد نے تقریب میں شرکت کی۔سکول کے پرنسپل بریگیڈئر ریٹائرڈ جاوید احمد نے سالانہ رپورٹ پیش کی۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ اُن کی حکومت صوبے کے نظام تعلیم کو نئے خطوط پر استوار کر رہی ہے جس کا مقصد تعلیمی اداروں کو اس قابل بنانا ہے کہ وہ ایسے طلباء پیدا کریں جو معاشرے میں برائیوں کے خلاف لڑ سکیں۔ خصوصی طور پر انتہا ء پسندی اور غلط رجحانات کامقابلہ کرنے کے قابل ہو سکیں۔انہوں نے کہاکہ یہ ساری باتیں اس امر کا تقاضاکرتی ہیں کہ طلباء کو تنگ ذہنی سے نکالا جائے اور آزادانہ طور پر سوچنے سمجھنے کیلئے اُن کے ویژن میں پختگی لائی جائے ۔ انہوں نے کہاکہ آج کے اُستاد کی ذمہ داری ہے کہ وہ نو عمر نفوس کو متحرک نوجوان اور بہترین شہری میں تبدیل کریں۔انہوں نے کہاکہ پی ایم اے ، دیگر ملٹری اکیڈمیوں ، میڈیکل اور انجینئرنگ کالجوں میں ایبٹ آباد پبلک سکول کے طلباء کی کثیر تعداد کا موجود ہونا انتہائی خوش آئندہے اور یہ کہنا بے جا نہ ہو گا کہ ان تمام اداروں کے لئے یہ سکول ایک نرسری کا درجہ رکھتا ہے۔پرنسپل کی طرف سے پیش کئے گئے مطالبات کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے آڈیٹوریم کی تعمیر کی منظوری دی جس میں ورزش گاہ ، سکواش کورٹ، ان ڈور گیمز اور سٹاف کلب کی سہولیات دستیاب ہوں گی۔وزیراعلیٰ نے دو ہاسٹلز کی تعمیر ، تین بسوں کی تبدیلی، سٹاف کی رہائش گاہوں کی مرمت ، دو نئے رہائش گاہوں ، سوئمنگ پول کی تعمیر اور سٹاف کیلئے ایک ماہ کی بونس تنخواہ کی بھی منظوری دی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول